The news is by your side.

Advertisement

اسرائیل کو اسلحے کی فروخت بند کی جائے، برطانوی پارلیمنٹ‌ میں‌ بل پیش

برطانیہ کے رکن پارلیمنٹ نے اسرائیل کے ساتھ  اسلحے کی فروخت فوری ختم کرنے کا بل ایوان میں پیش کردیا۔

نمائندہ اے آر وائی ینوز کے مطابق لیڈز سے منتخب ہونے والے رُکن پارلیمنٹ رچرڈ برگن نے اسرائیل کو اسلحے سے فروخت ختم کرنے کا بل پارلیمان میں پیش کر دیا ۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’گزشتہ پانچ سالوں میں برطانوی حکومت نے اربوں پاؤنڈز کے ہتھیار اسرائیل کو فروخت کیے، جس کو اسرائیلی فورسز نے فلسطینیوں کی نسل کشی کے لیے استعمال کیا‘۔

رچرڈ برگن کا کہنا تھا کہ ’ اسرائیلی فورسز یہ ہتھیار فلسطینیوں کی نسل کشی کے لیے استعمال کررہی ہے، اگر برطانوی حکومت اسرائیل کو مسلح کر رہی ہے تو  پھر وہ امن کی دعویدار کیسے ہو سکتی ہے؟‘۔

مزید پڑھیں: اسرائیل کا مسجد اقصیٰ کا انتظام سعودی عرب کو دینے پر غور

یہ بھی پڑھیں: برطانوی رکن پارلیمنٹ کا اسرائیل پر پابندیوں اور فلسطین کو تسلیم کرنے کا مطالبہ

رچرڈ برگن نے کہا کہ ’حال ہی میں فلسطینیوں پر اسرائیلی کی جارحیت کا مظاہرہ ہم سب نے دیکھا، اس سلسلے کو اب بند ہونا چاہیے‘۔

رکن پارلیمنٹ نے بتایا کہ بل کو پارٹی کے دیگر اراکین پارلیمنٹ کی حمایت بھی حاصل ہے۔  اگر مذکورہ بل برطانیہ کی پارلیمنٹ سے منظور ہوجاتا ہے تو حکومت کو اسرائیل کے ساتھ کی جانے والی اسلحہ ڈیل ختم کرنا ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں