The news is by your side.

Advertisement

اداکارہ اپنے حق میں‌ دلائل دیتے ہوئے پھوٹ‌ پھوٹ‌ کر رونے لگیں

لاہور: پاکستانی اداکارہ میرا کمرہ عدالت میں اپنے حق میں صفائی پیش کرنے کے لیے جذباتی انداز اختیار کیا تو عدالت نے انہیں خاموش ہونے کا حکم دیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق لاہور کے سیشن کورٹ میں اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح  کیس کی سماعت سیشن جج رائے احمد خان نے کی۔ میرا اپنے وکلا کے ساتھ چہرے پر سیاہ ماسک لگا کر عدالت میں پیش ہوئی۔

جج کی جانب سے روسٹروم پر جب اداکارہ کو طلب کیا گیا تو انہوں نے جذباتی انداز اختیار کیا اور رو رو کر اپنے حق میں صفائی پیش کرتی رہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ’جج صاحب میں دس سال سے انصاف کے لیے در بدر پھر رہی ہوں، مگر میری داد رسی نہیں ہوئی، امریکا کی عدالت میں  پیش ہوئی تو وہاں میری بات کو مکمل سنا گیا‘۔

عدالت نے اداکارہ میرا کو چیخ چیخ کر بولنے سے منع کیا اور کہا کہ اگر ایسے ہی گفتگو کرنا ہے تو آپ اپنی نشست پر  بیٹھ جائیں۔

عدالت نے ترمیمی شواہد پر وکلا کو بحث کے لیے طلب کرتے ہوئے سماعت پانچ اکتوبر تک ملتوی کر دی۔میرا نے میڈیا سے مختصر گفتگو میں کہا کہ میں نے نکاح نہیں کیا، دس سال سے انصاف کے لیے بھٹک رہی ہوں ۔

انہوں نے کہا کہ ’شوٹنگ کو نکاح کا نام دیا جارہا ہے، فلموں میں پیار، محبت،نکاح سب جھوٹ ہوتاہے‘۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ’مجھ پر دائر ہونے مقدمےکی وجہ سے شوبز انڈسٹری کا اربوں روپے کا سرمایہ ڈوب گیا‘۔

ایڈیشنل سیشن جج لاہور راٸے احمد خان  نے اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کیس میں  اپیل پر سماعت کی،اداکارہ میرا اپنے وکلاء کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئیں ۔

Comments

یہ بھی پڑھیں