The news is by your side.

Advertisement

پیٹرول مہنگا ملنے پر شہری کا پمپ ملازم پر تشدد

خیبرپختون خواہ کے علاقے ایبٹ آباد میں پیٹرول مہنگا ہونے پر شہری نے پمپ کے ملازم کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق ایبٹ آباد میں ایک شہری نے گاڑی میں ایک لیٹر پیٹرول ڈلوایا تو ملازم نے 127 روپے 30 پیسے کے حساب سے پیسے مانگے تو شہری مشتعل ہوگیا۔

ملازم نے جب رقم ادا کرنے پر زور دیا تو شہری نے پیٹرول پمپ پر کام کرنے والے ملازم کا گریبان پکڑا اور اُس پر تشدد کرنا شروع کردیا۔

مشتعل نوجوان نے ملازم کے منہ پر مکے مارے، اسی دوران پمپ پر کھڑے شہریوں نے بیچ بچاؤ کروایا تو شہری نے بتایا کہ یہ ’مجھ سے ایک لیٹر پیٹرول کے پیسے اضافی مانگ رہا ہے‘۔

شہریوں نے مشتعل نوجوان کو گزشتہ روز حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات پر کیے جانے والے اضافے سے آگاہ کیا اور بتایا کہ ’پیٹرول کی قیمت میں اضافہ ملازم نے نہیں حکومت نے کیا ہے‘۔

اس پر نوجوان نے بتایا کہ اُسے پیٹرول کی قیمت میں اضافے کا کوئی علم نہیں تھا۔

یاد رہے کہ حکومت نے اکتوبر کے ابتدائی پندرہ روز کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کا اعلان گزشتہ روز کیا، نوٹی فکیشن کے مطابق پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 4 روپے،  ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے، لائٹ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت میں8روپے82پیسے اور مٹی کےتیل کی فی لیٹر قیمت میں 7 روپے 5 پیسے اضافہ کیا۔

حالیہ اضافے کے بعد پٹرول کی فی لیٹرقیمت 127روپے30 پیسے تک پہنچ گئی، اسی طرح ہائی اسپیڈ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت 122 روپے چار پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت 99 روپے 31 پیسے، لائٹ ڈیزل 99 روپے 51 پیسے تک پہنچ گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں