The news is by your side.

Advertisement

2 گھنٹے سے زائد سفر کرنیوالے مسافروں کیلیے اچھی خبر

فضائی کمپنیوں کی جانب سے مسافروں پر اعتماد بحال کرنے کے لیے نت نئے طریقے اختیار کیے جاتے ہیں تاکہ مسافر سفر کے لیے ان کے ہی طیارے کا انتخاب کریں۔

بھارتی ایئرلائن وستارا نے سوشل میڈیا پر سخت تنقید کے بعد دو گھنٹے سے زائد اندرون ملک پروازوں میں بھی گرم کھانا فراہم کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

ایئرلائن کی جانب سے ٹھنڈا کھانا پیش کرنے پر اسے سخت تنقید کا سامنا تھا فی الحال کھانے کے لیے صرف سبزی دی جائے گی۔

طیارے میں کورونا کی احتیاطی تدابیر کو مدنظر رکھتے ہوئے مسافر اور میزبان کے درمیان مناسب فاصلہ رکھا جائے گا۔

حکومتی ہدایات کے مطابق گرم کھانے کو عارضی طور پر اکانومی کلاس میں پہلے سے پیک کیے گئے نمکین کے ساتھ تبدیل کر دیا ہے۔

ایئرلائن کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں وستارا کو موصول ہونے والی کسٹمر کی رائے سے پتہ چلتا ہے کہ مسافر جہاز میں کھانا کھانا چاہتے ہیں۔

ایک پریس بیان میں کہا گیا کہ’ مینو کو ہر تین دن بعد تبدیل کیا جائے گا، کھانے میں کسٹمر کی پسندیدہ چیزیں شامل ہوں گی جیسے، سبزی، بریانی، دال مکھانی۔

وستارا کی 60-70 فیصد پروازیں اندرون ملک چلتی ہیں۔ چیف کمرشل آفیسر ونود کنن نے کہا کہ پچھلے سال، اندرون پروازوں میں کھانا دینے پر مسافروں کی رائے ملی جلی تھی جبکہ کھانے کے مینیو میں دیگر اشیا بھی شامل کی جائیں گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں