The news is by your side.

Advertisement

پیپلزپارٹی کے رکن اسمبلی کیخلاف ناظم جوکھیو کے قتل کا مقدمہ درج

کراچی: پیپلزپارٹی کے رکن اسمبلی اویس جوکھیو کے خلاف ناظم جوکھیو کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پیپلزپارٹی کے رکن اسمبلی اویس جوکھیو کے خلاف ناظم جوکھیو کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا، ناظم جوکھیو کی لاش گزشتہ روز ملیر میمن گوٹھ سے برآمد ہوئی تھی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ایم پی اے کریم جوکھیو کے سیکریٹری نیاز جوکھیو کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اویس جوکھیو پر پارٹی کارکن ناظم جوکھیو کے قتل کا الزام ہے، اویس جوکھیو پیپلزپارٹی کے رکن قومی اسمبلی عبدالکریم کے چھوٹے بھائی ہیں۔

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ملیر میں ناظم جوکھیو کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو ورثا کی ‏مرضی سے ایف آئی آر درج کرنےکی ہدایت کی تھی۔

مزید پڑھیں: ناظم جوکھیو کے قتل کا نوٹس؛ وزیراعلیٰ کی اہم ہدایات جاری‏

قبل ازیں ملیر جام گوٹھ میں نوجوان کے قتل پر اہلخانہ نے جناح اسپتال میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‏سالارگوٹھ میں گزشتہ روز بااثر افراد تلور پرندےکا شکار کرنےآئےتھے تمام افراد پی پی رہنماجام اویس بجار کے ‏مہمان تھے۔

لواحقین نے الزام عائد کیا تھا کہ رات کو جام اویس بجار کے گارڈ گھرآئے اور ناظم جوکھیو کو اوطاق لے گئے مقتول ‏کے بھائی نےاوطاق جاکراویس بجارسےمعافی مانگی مگراسےرحم نہ آیا، اویس بجارکےگارڈزنےناظم جوکھیو ‏پر تشدد کیا اور بھائی کو گھربھیج دیا۔

لواحقین کا کہنا تھا کہ لاش کی اطلاع میمن گوٹھ تھانےسےموصول ہوئی اور پولیس نے ڈرامائی کارروائی میں 2افراد کو ‏حراست میں لیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں