The news is by your side.

Advertisement

اسٹیبلشمنٹ سے راستہ نکالنے کا نہیں کہا، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ میں نے اسٹیبلشمنٹ سے راستہ نکالنے کا نہیں کہا، راستہ نکالنے سے متعلق خبر غلط ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ سے میں نے کوئی درخواست نہیں کی تھی، پارٹی رہنماؤں کی جانب سے تجویز آئی تھیں میں نے کہا بہترین الیکشن ہے۔

امریکیوں کی کس کس سے ملاقاتیں ہورہی تھیں سب پتا ہے

عمران خان نے کہا کہ امریکیوں کی یہاں کس کس کیساتھ ملاقاتیں ہورہی تھیں سب پتہ ہے، ہمارے مخالف صحافیوں تک سے امریکیوں کی ملاقاتیں ہوئیں، امریکیوں کی پاکستان میں ملاقاتوں کی ساری رپورٹ آتی رہی ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ امریکی ہمارے پارٹی کے بکے ہوئےلوگوں سے مل رہے تھے، یہ سازش نہیں ہے تو کیا ہے، یہاں ملاقاتیں اوروہاں مراسلے بھیجے جارہے ہیں۔

عدم اعتماد ایک دن کا کھیل نہیں تھا

انہوں نے کہا کہ اگست سےاندازہ اور اکتوبرمیں واضح ہوگیا تھا گیم چل رہی ہے، کابینہ کوکہا تھا تیاری کرلو اپوزیشن گیم کھیل رہی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ایک دن کا کھیل نہیں تھاعدم اعتماد ابھی نہیں ہوئی اورانہیں پہلےسے پتہ تھا، کبھی بھی باہرملک میرجعفر میرصادق جیسے سہولت کاروں کی مدد کے بغیرکچھ نہیں کرسکتے۔

نواز شریف بزدل آدمی ہے

وزیراعظم نے کہا کہ نوازشریف بزدل آدمی ہے جیل میں ایک دن نہیں گزارسکتا، نوازشریف کی میڈیکل ہمارے سامنے رکھی گئیں، مجھےافسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ ہمیں بہت بڑا دھوکا دیا گیا، ہمیں ایسی رپورٹس دی گئیں کہ نوازشریف ایئرپورٹ تک بھی نہیں پہنچ سکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ تین مارچ کو نواز شریف کی حسین حقانی سے میٹنگ ہوئی تھی۔ حسین حقانی وہ شخص ہےجو پاکستانی فوج کیخلاف مہم چلاتاہے، یہ پاکستان کےدشمن ہیں،ان کوپتہ ہےپاکستان کوکسی نےمتحدرکھناہےتووہ پاک فوج ہے.

الیکشن کے لیے میں خود ٹکٹ دوں گا

عمران خان نے کہا کہ بےشک الیکشن ہارجاؤں لیکن نظریاتی لوگوں کوہی ٹکٹ دوں گا، اس مرتبہ الیکشن کیلئےمیں خودٹکٹ دوں گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ میں کبھی کسی پر بلیم نہیں کرتا، خود جانتا ہوں میں نے کہا غلطی کی، الیکشن مہم میں مصروف تھا ٹکٹ نہیں دے سکا تھا لیکن اس مرتبہ خود ٹکٹ دوں گا، نظریہ رکھنےوالےسب میرےساتھ کھڑےہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں