The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کی زیر صدارت مشاورتی اجلاس کا احوال سامنے آگیا

لندن: سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کی زیر صدارت مشاورتی اجلاس کا احوال سامنے آگیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق مسلم لیگ ن کے مشاورتی اجلاس میں فوری انتخابات پر رائے تقسیم ہے اور اکثریت فوری انتخابات کے حق میں نہیں ہے۔

ارکان ذرائع کا بتانا ہے کہ معاملات درست کرنے کے بعد ہی انتخابات میں جانا بہتر ہے اور چند رہنماؤں کی رائے میں انتخابات میں تاخیرسے مشکلات میں اضافہ ہوگا۔

انتخابات کے حامی رہنماؤں کا پنجاب میں سیاسی کشمکش پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ نوازشریف نے آصف زرداری کی آرا سے پارٹی لیڈرزکو آگاہ کیا، اکثریتی رائے ہے کہ مشکل وقت میں جو جماعتیں ساتھ چلیں ان کی رائےکا احترام کرنا چاہیے۔

اکثریتی رہنماؤں کی رائے ہے کہ بجٹ کے بعد دوبارہ مشاورت کرنی چاہیے، سال نہیں تو کم از کم چھ ماہ کے بعد انتخابات کی بات ہونی چاہیے۔

واضح رہے کہ لندن میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیٹے حسن نواز کے دفتر کے باہر مسلم لیگ (ن) اورپاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے کارکن آمنے سامنے آگئے۔

ن لیگ اورپی ٹی آئی کے کارکنوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے۔ پی ٹی آئی اور لیگی کارکنوں نے ایک دوسرے کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔

دونوں جماعتوں کے کارکن ڈھول کی تھاپ پر رقص کرتے رہے۔

دوسری جانب وزیراعظم شہباز شریف کی قیادت میں وفاقی وزرا کا وفد لندن میں موجود ہے جہاں وفد نے مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف سے ملاقات کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں