The news is by your side.

Advertisement

بچی نے آن لائن کیا آرڈر کیا کہ فوڈ کمپنی حیران رہ گئی ؟

منیلا: کرونا وبا کے دوران دنیا بھر میں آن لائن فوڈ ڈلیوری ایپ کے زریعے گھروں پر اپنے پسندیدہ کھانے منگوانے کا رجحان تیزی سے بڑھتا جارہا ہے، ایسے میں فلپائن میں ہونے والے واقعے پر لوگ بھی حیران رہ گئے ہیں۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق فلپائن میں ایک سات سالہ بچی نے آن لائن فوڈ ڈلیوری ایپ کے ذریعے کھانا آرڈر کیا، مگر تماشہ اس وقت ہوا، جب ایک دو نہیں بلکہ بیالیس ڈیلیوری بوائے آرڈر لے کر بچی کے گھر پہنچ گئے۔

مقامی میڈیا رپورٹ کے مطابق فلپائن کی سیبو سٹی کے اسکول میں پڑھنے والی ایک لڑکی نے فوڈ پانڈا ایپ سے لنچ کیلئے چکن کٹ لیٹ آرڈر کیا تھا، اس کے والدین گھر پر نہیں تھے اور آرڈر کے بعد وہ اپنی دادی کے ساتھ کھانے کا انتظار کرنے لگی۔

کچھ دیر بعد اس لڑکی کے گلی میں ڈلیوری بوائے کھانا لیکر پہنچے لیکن وہی ایک کھانا لئے کئی ڈلیوری بوائے اس گلی میں دکھائی دئیے، دیکھتے ہی دیکھتےایک دو نہیں بلکہ بیالیس ڈیلیوری بوائے آرڈر لے کر بچی کے گھر پہنچ گئے، ڈلیوری بوائز کو بھی سمجھ نہیں آرہا تھا کہ آخر ماجرا کیا ہے، اس واقعے کو دیکھنے کیلئے گلی میں بھیڑ لگ گئی تھی۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق پہلے پہل محلے داروں کو شک ہوا کہ کہیں غلطی سے بچی نے ایسی کوئی حرکت کو نہیں کی، بعد ازاں معاملے کی تفتیش کی گئی تو حقیقت سامنے آئی کہ ایپ میں تکنیکی خرابی کے باعث یہ کارنامہ ہوا ہے۔

معاملے پر کمپنی کا کہنا ہے کہ لڑکی کے گھر میں انٹرنیٹ اسپیڈ کی رفتار سست تھی، جس کے باعث ایپ نے ٹھیک سے کام نہیں کیا اور ایک کے بعد ایک 42 آرڈر ریسیو ہو گئے۔

واقعے کے وقت ایک لڑکے نے اس تمام ویڈیو اپنے کیمرے میں قید کر لیا اور سوشل میڈیا پر وائرل کردیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں