اماراتی شہری نے 75برس کی عمر میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کرلی 75-year-old Emirati
The news is by your side.

Advertisement

اماراتی شہری نے 75 برس کی عمر میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کرلی

دبئی : اماراتی شہری نے 75 برس کی عمر میں جامعہ دبئی سے ماسٹرز کی تعلیم مکمل کرلی، بزرگ شہری کے بیٹے کا کہنا ہے کہ ’مجھے اپنے والد پر فخر ہے‘۔

اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کے بزرگ شہری نے ماسٹرز کی ڈگری حاصل کرکے ثابت کردیا کہ حصول تعلیم کی کوئی عمر نہیں ہوتی۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ 70 برس سے زائد عمر کے حامل علی محمد ناجی کی گریجویشن کی تقریب 19 اکتوبر کو منعقد ہوئی جس کی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر ہوئی وہ دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی۔

اماراتی میڈیا کے مطابق سابق کیمسٹ علی محمد ناجی کا کہنا ہے کہ میرا ہمیشہ سے خواب تھا کہ میں اپنی ماسٹرز کی ڈگری حاصل کروں لیکن روزگار کی مصروفیت کے باعث دوبارہ یونیورسٹی لوٹے ہی نہیں۔

مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ علی محمد سنہ 1980 میں اسکاٹ لینڈ سے ہائیر ڈپلومہ کیا تھا۔

ناجی کے بیٹے فہد علی کا کہنا تھا کہ ’مھجے میرے والد پر فخر ہے، وہ دوبارہ یونیورسٹی جانا چاہتے تھے اور اب انہوں نے اپنا خواب پورا کرلیا ہے‘۔

اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ فہد علی نے اپنے والد کی گریجویشن تقریب میں سیلفی بناکر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پوسٹ کی، جو ایک ہی رات میں وائرل ہوگئی۔

فہد علی کی ٹوئٹر پر شیئر کی گئی تصاویر نے 1200 ٹوئٹر صارفین نے ری ٹویٹ کیا اور 2 ہزار سے زائد افراد نے اسے لائک کیا۔

اماراتی میڈیا کا کہنا تھا کہ فہد علی اپنے ٹویٹر پر تصاویر کے ساتھ تحریر کیا کہ ’میرے والد نے 75 برس کی عمر میں اپنی تعلیم مکمل کرنے کا فیصلہ کیا اور آج گریجویشن کی تقریب میں انہیں ماسٹرز کی ڈگری دی گئی‘ مجھے والد پر فخر ہے۔

اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا صارفین نے علی محمد ناجی کو 75 سال کی عمر میں ماسٹرز کی تعلیم مکمل ہونے پر مبارک باد بھی دیں۔

اماراتی میڈیا کے مطابق ایک خاتون مریم نے ٹوئٹ کیا کہ میں نے ایم بی اے کے لیے دستاویزات جمع کروائے ہیں اور گریجویشن مینجمنٹ داخلہ ٹیسٹ کے باعث شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے لیکن یہ تصاویر دیکھنے کے بعد مجھے حوصلہ ملا، ’علی محمد ناجی میرے لیے رول ماڈل ہیں‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں