The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرعامر لیاقت کی نماز جنازہ آج بعد نماز جمعہ ادا کی جائے گی

کراچی : رکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعامر لیاقت حسین کی نمازجنازہ آج بعد نمازجمعہ ادا کی جائے گی اور ان کی تدفین حضرت عبداللّٰہ شاہ غازی مزار کے احاطے میں کی جائے گی ۔

تفصیلات کے مطابق رکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعامر لیاقت حسین کی نمازجنازہ آج بعد نمازجمعہ ادا کی جائے گی اور ان کی تدفین حضرت عبداللّٰہ شاہ غازی مزار کے احاطے میں کی جائے گی ۔

اس حوالے سے ڈاکٹر عامر لیاقت کی سابقہ اہلیہ بشری اقبال نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر تصدیق کی تھی کہ عامر لیاقت کی تدفین ان کی وصیت کے مطابق کی جائے گی۔ ان کی نماز جنازہ بعد نماز جمعہ جامع مسجد عبداللہ شاہ غازی کلفٹن میں 2 بجے ادا کی جائے گی۔

انہوں نے مزید واضح کیا تھا کہ ان کے بچوں احمد عامر اور دعا عامر نے اپنے والد کے پوسٹ مارٹم کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔

ذرائع نے بتایا تھا کہ کہ عامر لیاقت نے اپنے وزارت کے دوران اپنی قبر کی جگہ رقم کے عوض مختص کروادی تھی جس احاطے میں تدفین ہوگی وہ شیخ لیاقت حسین کمپاؤنڈ کے نام سے ہے۔

ذرائع کے مطابق کمپاؤنڈ میں چار تدفین ہوچکی ہیں جبکہ 2007 میں عامر لیاقت نے 5 قبریں الاٹ کرائی تھیں، احاطے میں عامر لیاقت حسین کے والدین، نعت خواں خورشید احمد اور پہلی اہلیہ کے والد مدفن ہیں۔

واضح رہے گذشتہ روز ڈاکٹر عامر لیاقت حسین اچانک انتقال کرگئے ، ڈاکٹروں نے بتایا تھا کہ پی ٹی آئی ایم این اے کو مردہ حالت میں اسپتال لایا گیا تھا، عامر لیاقت کو ڈرائیور نے ساتھی ملازم کے ساتھ دوپہر ایک بجے اسپتال پہنچایا، جہاں ڈاکٹروں نے موت کی تصدیق کی۔

خیال رہے جولائی 1971 میں پیدا ہونے والے عامر لیاقت حسین پہلی بار 2002 کے عام انتخابات میں متحدہ قومی موومنٹ کے ٹکٹ پر حلقہ این اے 249 سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے اور انہیں وزیر مملکت برائے مذہبی امور مقرر کیا گیا۔

حسین جولائی 2007 تک مذہبی امور کے وزیر مملکت رہے، جب ان کی پارٹی نے انہیں اپنے عہدے سے، اور قومی اسمبلی کے رکن کی حیثیت سے اپنی نشست سے مستعفی ہونے کو کہا۔ بعد ازاں 2008 میں انہیں ایم کیو ایم سے نکال دیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں