The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں خاتون سیاسی کارکن کی خودکشی

نئی دہلی: بھارت میں عام آدمی پارٹی کی ایک خاتون کارکن نے خودکشی کرلی۔ خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ خاتون کو ایک پارٹی کارکن کی جانب سے مبینہ طور پر جنسی ہراساں کیا گیا جس سے دل برداشتہ ہو کر انہوں نے خودکشی کی۔

یہ واقعہ دہلی کے علاقے نیرالہ میں پیش آیا۔ خاتون اس سے قبل پارٹی کے ایک کارکن رمیش ودھوا کے خلاف شکایت درج کرواچکی تھیں کہ اس نے انہیں جنسی طور پر ہراساں کیا ہے۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے رمیش کو حراست میں لیا تھا تاہم بعد ازاں ضمانت پر رہا کردیا۔

بھارتی اداکارہ پوجا مشرا اجتماعی زیادتی کا شکار *

خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ رمیش کے ضمانت پر رہا ہونے کے بعد خاتون شدید ڈپریشن کا شکار تھیں۔ مبینہ ملزم کو ایک رکن قانون ساز اسمبلی کی پشت پناہی بھی حاصل تھی۔

بی جے پی کے علاقائی صدر ستیش اپادھائے کا دعویٰ ہے کہ خاتون نے مذکورہ کارکن کے خلاف عام آدمی پارٹی کے سینئر کارکنان کو شکایت کی تھی لیکن انہوں نے اسے نظر انداز کردیا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال اور ملزم کی پشت پناہی کرنے والا مقامی ایم ایل اے شرد چوہان خاتون کی موت ذمہ دار ہیں۔

بھارت کی پہلی خاتون ٹیکسی ڈرائیور پراسرار طور پر ہلاک *

عام آدمی پارٹی نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے موت پر سیاست قرار دیتے ہوئے اسے شرمناک عمل قرار دیا۔ پارٹی کے ترجمان دیپک بجپال نے کہا کہ پولیس کو درج کروائی گئی شکایت میں کسی ایم ایل اے کا ذکر نہیں جبکہ خاتون کو ہراساں کرنے والے شخص کا عام آدمی پارٹی سے کوئی تعلق نہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مذکورہ خاتون نے زہریلی دوا پی اور بعد ازاں لوک نائیک اسپتال میں طبی امداد کے دوران چل بسی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں