The news is by your side.

Advertisement

شرجیل میمن کے خلاف کرپشن ریفرنس کی سماعت 25 فروری تک ملتوی

کراچی: شرجیل انعام میمن و دیگر کے خلاف کرپشن ریفرنس پرسماعت کے دوران نیب کی جانب سے گواہ کی عدم پیشی اورپراسیکیوٹر کی عدم حاضری پراحتساب عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پیپلزپارٹی کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر اطلاعات و نشریات شرجیل انعام میمن ودیگر کے خلاف 5 ارب سے زائد کرپشن ریفرنس پرسماعت ہوئی۔

احتساب عدالت نے نیب کی جانب سے گواہ کی عدم پیشی اورپراسیکیوٹر کی عدم حاضری پربرہمی کا اظہار کرتے ریمارکس دیے کہ ایک ماہ تک عدالت میں پراسیکیوٹر نہیں، مقدمات کیسے چلیں گے؟۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ پراسیکیوٹر کی عدم تعیناتی سے مقدمات کا بوجھ بڑھ رہا ہے۔ احتساب عدالت نے پراسیکیوٹر کی تعیناتی کے لیے ڈی جی نیب کو خط لکھ دیا۔

بعدازاں احتساب عدالت نے شرجیل انعام میمن و دیگر کے خلاف کرپشن ریفرنس پرسماعت 25 فروری تک کے لیے ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ سابق صوبائی وزیراطلاعات شرجیل انعام میمن اور دیگر پر15-2013 کے دوران سرکاری رقم میں 5 ارب 76 کروڑ روپے کی خرد برد کا الزام ہے۔

شرجیل انعام میمن پرالزام ہے کہ انہوں نے مذکورہ رقم صوبائی حکومت کی جانب سے آگاہی مہم کے لیے الیکٹرونک میڈیا کو دیے جانے والے اشتہارات کی مد میں کی جانے والے کرپشن کے دوران خرد برد کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں