The news is by your side.

Advertisement

کرونا مریضوں کو لگنے والے انجکشن غائب، حکومت سے نوٹس لینے کا مطالبہ

کراچی: فارما ہول سیلرز نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کرونا وائرس کے مریضوں کو لگنے والے انجیکشنز غائب ہونے کا نوٹس لے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق فارما ہول سیل آرگنائزیشن کے صدر زبیر میمن نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت کرونا مریضوں کو لگنے والے انجکشن کی عدم سپلائی کا نوٹس لے، انجکشن کی سپلائی اسپتالوں میں رکنے سے بحران پیدا ہو گیا ہے۔

فارما ہول سیلرز کا کہنا ہے کہ میڈیسن کمپنیوں نے ایکٹمرا (ACTEMRA) انجکشن کی سپلائی اسپتالوں میں روکی جس کے سبب بحران پیدا ہوا ہے، انجکشن بلیک کرنے والے عناصر کو پکڑا جائے، اور میڈیسن مارکیٹوں کو اس کی سپلائی بحال کی جائے۔

پاکستان میں کرونا کیسز کی تعداد 1 لاکھ سے تجاوز کر گئی، 7 لاکھ ٹیسٹ مکمل

واضح رہے کہ ملک میں کرونا وائرس کی تیزی اور کرونا مریضوں میں تشویش ناک اضافے کو میڈیسن کمپنیوں نے نظرانداز کر کے کرونا کے مریضوں کو لگایا جانے والا انجکشن ایکٹمرا ACTEMRA 200mg/10ml کی سپلائی اسپتالوں کو بند کر دی ہے جس کے نتیجے میں مذکورہ انجکشن اسپتالوں اور میڈیسن مارکیٹوں سے غائب ہو گئے۔

صورت حال کی سنگینی کے پیشِ نظر ہول سیل کراچی فارما آرگنائزیشن کے صدر زبیر میمن اور جنرل سیکریٹری اسلم پولانی نے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومتِ پاکستان اور بالخصوص وفاقی و صوبائی وزارتِ صحت سے اپیل کی ہے کہ ایکٹمرا انجکشن بنانے والی دوا ساز کمپنیوں کے خلاف ایکشن لیا جائے تاکہ کرونا مریضوں کی زندگیوں کو بچانے کے لیے ڈاکٹرز اپنا کردار ادا کرتے رہیں۔

فارما ہول سیلرز نے یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ بعض عناصر انجکشن کا خفیہ اسٹاک کر کے بلیک میں فروخت کر رہے ہیں جن کے خلاف فوری ایکشن لینے کی ضرورت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں