The news is by your side.

Advertisement

اداکارہ رانی کی 73 ویں سال گرہ آج منائی جارہی ہے

معروف اداکارہ رانی کے مداح آج ان کی سال گرہ منا رہے ہیں۔

پاکستانی فلم انڈسٹری میں رانی کا سفر فلم محبوب سے شروع ہوا۔ ان کا اصل نام ناصرہ تھا، مگر 14 برس کی عمر میں‌ فلم نگری میں داخل ہونے والی ناصرہ نے یہاں‌ رانی کے نام سے اپنی جگہ بنائی.

اداکارہ نے 8 دسمبر 1946 کو لاہور میں آنکھ کھولی. فلم انڈسٹری میں انھیں‌ ابتدا میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا جس کے بعد اس دور کے فلم ساز رانی کو کاسٹ کرنے سے گریز کرنے لگے، لیکن انھوں نے ہمت نہ ہاری اور انڈسٹری سے ناتا جوڑے رکھا.

فلم دیور بھابی سائن کرتے ہی گویا رانی کی قسمت کا ستارہ بھی اوج پر چلا گیا۔ اس کے بعد فلم بہن بھائی سپرہٹ ثابت ہوئی اور پھر انھیں‌ انجمن جیسی فلم ملی جس نے انھیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا۔ رانی کے کیریر کی یادگار اور کام یاب ترین فلموں میں ایک گناہ اور سہی، بہارو پھول برساﺅ، ناگ منی اور ثریا بھوپالی شامل ہیں۔

فلم انڈسٹری اور رانی کے مداح ان کی 73 ویں سال گرہ پر آج پھر انھیں یاد کررہے ہیں۔ بڑے پردے پر اپنی اداکاری سے شائقین کے دلوں میں اتر جانے والی رانی کو فلم انڈسٹری بھی ایک باکمال اداکارہ کے طور پر یاد کرتی رہے گی جس نے اپنے ہر کردار کو نہایت خوبی سے نبھایا اور ان میں حقیقت کا رنگ بھر دیا۔ تیکھے نینوں والی رانی 1993 میں یہ دنیا ہمیشہ کے لیے چھوڑ گئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں