The news is by your side.

Advertisement

افغان صوبے ہلمند میں دھماکا، تین افراد ہلاک، درجنوں زخمی

کابل : افغانستان کے صوبے ہلمند میں ایک تقریب کے دوران بم دھماکے کے نتیجے میں تین افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان میں ایک بار پھر دہشت گردی کا واقعہ پیش آیا، صوبہ ہلمند کے لشکر گاہ اسٹیڈیم میں منعقدہ یوم کسان کے حوالے سے تقریب جاری تھی کہ اس دوران دہشت گردوں نے بم حملہ کردیا جس کے نتیجے میں 3 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ بم اسٹیڈیم میں نصب تھا جو تقریب کا آغاز ہوتے ہی پھٹ گیا، سیکیورٹی اہلکاروں نے کارروائی کے بعد علاقے کو کلیئر قرار دے دیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق واقعے کے عینی شاہد نے دھماکے کے نتیجے میں 7 افراد کی ہلاکت اور 10 سے زائد افراد کے زخمی ہونے کا دعویٰ کیا تھا۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ دھماکے کے نتیجے میں صوبہ ہلمند کے ڈائریکٹوریٹ آف اکنامی کے سربراہ محمد خان نصرت اپنی جان گنوا بیھٹے۔

حکام کا کہنا ہے کہ دہشت گرد حملے کی ذمہ داری تحریک طالبان افغانستان نے قبول کی ہے۔

مزید پڑھیں : افغانستان میں فوجی اڈے کے قریب خودکش حملہ، 12 افراد ہلاک

جنوری میں ہی افغانستان کے صوبے لوگر کے گورنر اور این ڈی ایف کے صوبائی چیف کے قافلے پر خودکش حملہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں گورنر کی حفاظت پر تعینات 8 سیکیورٹی اہلکار ہلاک جبکہ 10 زخمی ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ دوسری جانب طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکراتی دور کا سلسلہ بھی جاری ہے، جبکہ طالبان کا وفد افغان اپوزیشن رہنماؤں سے بھی ملاقات کرچکا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں