The news is by your side.

Advertisement

افغانستان کے منجمد اثاثوں کی بحالی ناگزیر ہے: وزیر اعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے ٹرائیکا پلس کے خصوصی نمائندوں سے ہونے والی ملاقات میں کہا ہے کہ افغانستان کے منجمد اثاثوں کی بحالی سمیت دیگر فوری اقدامات کی ضرورت ہے۔

ٹرائیکا پلس جس میں چین، روس، امریکا اور پاکستان شامل ہیں، کے نمائندوں نے آج وزیر اعظم سے ملاقات کی، وزیر اعظم نے ٹرائیکا پلس اجلاس کامیاب بنانے پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا افغانستان میں امن و استحکام خطے کی خوش حالی کے لیے ضروری ہے، امید ہے عالمی برادری صورت حال کی سنگینی کو تسلیم کرے گی۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہم افغان مسئلے کے حل کے لیے ہمیشہ سیاسی تصفیے پر زور دیتے رہے ہیں، عالمی برادری افغانستان میں انسانی اور اقتصادی مسئلے سے نمٹنے کے لیے فوری مدد کرے۔

انھوں نے کہا افغانستان میں امن و استحکام خطے کی خوش حالی کے لیے ضروری ہے، افغانستان کے لیے پاکستان نے ایک جامع سیاسی تصفیے کی حمایت کی تھی۔

ملاقات میں وزیر اعظم نے افغانستان کی اقتصادی مدد کی فراہمی پر زور دیتے ہوئے کہا امید ہے عالمی برادری صورت حال کی سنگینی کو تسلیم کرے گی۔

یاد رہے کہ 9 نومبر کو وزیر اعظم نے ایک ٹوئٹ میں کہا تھا کہ میں افغانستان میں اس انسانی المیے کی نشان دہی کرتا آیا ہوں،اب WFP متنبہ کر رہا ہے کہ 2 کروڑ 30 لاکھ انسان بھوک کی نذر ہوا چاہتے ہیں۔

انھوں نے لکھا کہ اس صورت حال میں پاکستان تو ہر ممکن مدد کرتا رہے گا، مگر لازم ہے کہ اب عالمی برادری حرکت میں آئے،افغانوں کو نگلتی اس آفت کا تدارک اخلاقی طور پراس کے ذمے ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں