site
stats
پاکستان

اوبر اور کریم ٹیکسی سروس ‌غیر قانونی قرار، کریک ڈاؤن کا آغاز

لاہور : لاہور میں آن لائن ٹیکسی سروس اوبر اور کریم کے خلاف کریک ڈاؤن کے بعد کراچی میں بھی تیاریاں شروع کردی گئیں، کراچی میں اوبر اور کریم ٹیکسی سروس کے خلاف کارروائی کے لئے سیکریٹری ٹرانسپوٹ نے پی ٹی اے کو ایپلیکیشن بند کرنے کے لئے خط لکھ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے اوبر، کریم اور اے ون سروس کے نام سے کیب سروس مہیا کرنے والی کمپنیوں کو غیر قانونی قرار دے کر کریک ڈاون شروع کر دیا۔

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے غیر قانونی سروس کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز کرتے ہوئے 100 سے زائد گاڑیوں کو تحویل میں لے لیا ہے اور فی گاڑی 2000 روپے جرمانہ عائد کیا ہے۔

حکومت کی جانب سے جاری کیے جانے والے نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ اوبر، کریم ٹیکسی سروس غیر قانونی ہیں، اس لیے ان کے خلاف فوری طور پر کریک ڈاﺅن کیا جائے۔

uber-post

محکمہ ٹرانسپورٹ نے کہا ہے کہ پرائیویٹ گاڑیوں کو ٹیکسی کے طور پر استعمال کرنے کے لیے رجسٹریشن کرائی جائے اور روٹ پرمٹ لیا جائے۔

محکمہ ٹرانسپورٹ نے غیر قانونی طور پر چلنے والی کیب سروس گاڑیوں اور ڈرائیورز کو پکڑنے کے لئے سی ٹی او کیپٹن احمد مبین اور سی ای او ایل ٹی سی خواجہ حیدر لطیف سے مدد مانگ لی ہے۔

note1

دوسری جانب کراچی میں بھی آن لائن ٹیکسی سروس اوبر اور کریمی کے خلاف کاروائی کی تیاریاں شروع کردی گئی ہے ، ٹیکسی سروس کے خلاف کارروائی کے لئے سیکریٹری ٹرانسپوٹ نے پی ٹی اے کو ایپلیکیشن بند کرنے کے لئے خط لکھ دیا ہے۔

واضح رہے کہ اوبر، کریم ٹیکسی سروسز دنیا بھر میں آن لائن ایپ کے ذریعے ڈور ٹو ڈور کیب سروس مہیا کرتی ہیں۔ ان کمپنیوں کی سروس سے فائدہ اٹھانے کیلئے صارفین کا اینڈرائڈ موبائل یوزر ہونا ضروری ہوتا ہے، کوئی بھی شہری موبائل فون پر اوبر ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کر کے حسبِ ضرورت کسی بھی جگہ مختصر وقت میں ٹیکسی منگوا سکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top