چنیوٹ میں ایڈز کے نئے 10 مریض سامنے آگئے، تعداد 48ہوگئی -
The news is by your side.

Advertisement

چنیوٹ میں ایڈز کے نئے 10 مریض سامنے آگئے، تعداد 48ہوگئی

چنیوٹ: ایڈز کا لاعلاج مرض تیزی سے پھیلنے لگا، ایڈز کے دس نئے مریضوں کا انکشاف ہوا ہے، جسکے بعد تعداد اڑتالیس ہوگئی ہے۔

پنجاب کے شہر چنیوٹ میں ایڈز جیسا مہلک مرض تیزی سے پھیلنے لگا، محکمہ ہیلتھ اور ریسکیو ذرائع کے مطابق چنیوٹ میں ایڈز کے دس نئے مریضوں کا انکشاف ہوا ہے، جس کے بعد ایڈز کے مریضوں کی تعداد 48 ہوگئی ہے، جن میں سے 28افراد الائیڈ ہسپتال فیصل آباد میں زیر علاج ہیں جبکہ 8افراد اب تک جاں بحق ہو چکے ہیں۔

دس نئے مریضوں کی عمریں پانچ سال سے سترہ سال تک ہے، ان مریضوں میں سات مریضوں کو لاہور سروسز ہسپتال علاج کے لیے شفٹ کردیا گیا ہے جبکہ تین مریضوں نے لاہور جانے سے انکار کردیا ہے۔

لاہور سروسز ہسپتال جانیوالوں میں نو سالہ ساجدہ دختر یوسف ، پانچ سالہ حسن ولد یوسف ، سترہ سالہ یاسین ولد یوسف ۔ آٹھ سالہ شان حیدر ولد جعفر ۔ دس سالہ شگفتہ دختر فریاد، وغیرہ شامل ہیں جبکہ صوبیہ ، عذراں اور ندیم نے جانے سے انکار کردیا ہے۔

انچارج ایچ آئی وی ایڈز ڈاکٹر نازیہ احسان نے چار سالہ حسن علی ، دس سالہ خالدہ اور سترہ سالہ یاسین میں بھی چند روز قبل ایڈز کی تصدیق کی تھی، ان تینوں کا تعلق ایک ہی گھر سے ہے اور یہ حقیقی بہن بھائی ہیں۔

مہلک مرض کی موجودگی سے لوگ سخت خوف و ہراس کا شکار ہیں یہاں تک کہ ایڈز کی تشخیص کے ڈر سے لوگوں نے ٹیسٹ کروانے سے انکار کر دیا ہے۔

ایڈز کنٹرول پروگرام پنجاب کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عدنان ظفر نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ابتدائی طور پر 42 افراد میں ایچ آئی وی وائرس پایا گیا تھا، جن میں سے 30 لوگ ایڈز کے مریض ہیں، ایچ آئی وی سے متاثرہ  افراد میں ہر عمر کے مرد، خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں