The news is by your side.

Advertisement

شام میں باغیوں کے زیرِ قبضہ علاقوں میں فضائی حملے،100افراد جاں بحق

ادلب : شام میں جنگ بندی کے لیے امریکہ اور روس کی جانب سے منصوبے کے اعلان کے بعد باغیوں کے زیرِ قبضہ علاقوں میں فضائی حملے کیے گئے ہیں جن میں کم سے کم 100 افراد جاں بحق ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق شامی حزبِ اختلاف کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ ادلب میں ایک بازار پر حملے میں 37 افراد ہلاک ہوئے جبکہ حلب میں ہونے والے فضائی حملے میں 45 لوگ مارے گئے۔

شام میں دس روزہ جنگ بندی پیر سے شروع ہونی ہے لیکن اس سے پہلے ہی جہادی عسکریت پسندوں کے خلاف یہ حملے کیے حملے کیے گئے۔

ترکی اور یورپی یونین نے اس جنگ بندی کے منصوبے کا خیر مقدم کیا تاہم خبردار کیا تھا کہ اس حوالے سے مزید اقدامات کی بھی ضرورت ہے۔

شام میں حزبِ اختلاف کے ترجمان کا کہنا تھا کہ جنگ بندی کے منصوبے کچھ امید پیدا ہوئی ہے تاہم یہ کس طرز پر لاگو ہوگا اس حوالے سے مزید تفصیلات فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔

یاد رہے کہ سوئزرلینڈ کے شہر جنیوا میں مذاکرات کے بعد امریکہ اور روس نے شام میں 12 ستمبر کو غروب آفتاب سے جنگ بندی پر اتفاق کیا ہے۔

روس اور امریکہ کے درمیان مذاکرات میں طے کیا گیا ہے کہ باغیوں کے کنٹرول میں مخصوص علاقوں کے خلاف شامی حکومت کارروائی نہیں کرے گی۔

واضح رہے کہ شام میں شورش کا آغاز پانچ سال پہلے صدر بشارالاسد کے خلاف بغاوت سے ہوا اور اب تک اس سے کم سے کم تین لاکھ سے زائد لوگ مارے جا چکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں