صومالیہ: امریکی فوج کا فضائی حملہ، 60 شدت پسند ہلاک، امریکی فوج کا بڑا دعویٰ
The news is by your side.

Advertisement

صومالیہ: امریکی فوج کا فضائی حملہ، 60 شدت پسند ہلاک

موغادیشو: صومالیہ میں امریکی فوج کے فضائی حملے کے نتیجے میں 60 شدت پسند ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی فوج کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ صومالیہ کے مرکز میں واقع علاقہ ہرارڈیر میں موجود عسکریت پسندوں کے ٹھکانوں پر کیے جانے والے فضائی حملے کے باعث ساٹھ جنگجوں ہلاک ہوئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صومالیہ میں شدت پسند تنظیم ’الشباب‘ کے 60 جنگجوں امریکی فضائی حملے میں ہلاک ہوئے، حملہ گذشتہ ہفتے کیا گیا تھا۔

اس سے قبل نومبر 2017ء میں صومالییہ میں ایک امریکی فضائی حملے میں الشباب کے 100 سے زائد عسکریت پسند مارے گئے تھے۔

امریکی فوجی حکام کے مطابق اس حملے میں صومالیہ کی فوج نے بھی مدد فراہم کی، اور یہ 2017 کے بعد سب سے بڑی کارروائی ہے۔

حکام کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہنا تھا کہ الشباب دہشت گرد گروہ خطے کے لیے ایک بڑا چیلج اور خطرہ ہے، جس کے خلاف بھرپور کارروائی جاری رہے گی۔

امریکی فضائیہ رواں سال دو درجن سے فضائی حملے صومالیہ میں کرچکی ہے، جس میں ڈرون اٹیک بھی شامل ہے۔

امریکا نے اس بات کا عندیہ دیا ہے کہ شدت پسندوں کو خطے میں کمزور کردیا ہے، الشباب کے روابط دہشت گروہ القاعدہ سے بھی ہیں۔

خیال رہے کہ اس سے قبل کیے جانے والے امریکی فضائی حملے میں متعدد عام شہری بھی مارے گئے تھے جس کے بعد انسانی حقوق کی تنظیموں نے حملوں کے خلاف آواز بلند کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں