اپنی نسل کا وہ واحد جانور جو دنیا بھر میں کہیں نہیں -
The news is by your side.

Advertisement

اپنی نسل کا وہ واحد جانور جو دنیا بھر میں کہیں نہیں

بدلتے ہوئے موسموں اور شکار کے لیے خطرناک جدید تکنیکوں کے استعمال کے بعد جنگلی حیات کی آبادی میں خطرناک کمی واقع ہورہی ہے اور بہت سے جانداروں کی معدومی کا خدشہ ہے۔

تاہم ایک جانور ایسا بھی ہے جو اپنی نسل کا واحد معلوم رکن ہے اور ابھی تک اس نسل کے مزید جانور نہیں دیکھے گئے۔

بندر سے ملتا جلتا ایک جانور اورنگٹن خود بھی ایک نایاب جانور ہے جو صرف ملائیشیا اور انڈونیشیا میں پایا جاتا ہے۔ اس کی نسل جسے البینو اورنگٹن کہا جاتا ہے، اس کا صرف ایک ہی رکن اب تک دیکھا جاسکا ہے۔

عام اورنگٹن

یہ اورنگٹن البانزم نامی بیماری کا شکار ہے۔ یعنی اس کے جسم میں رنگ پیدا کرنے والے پگمنٹس کی کمی ہے جس کی وجہ سے یہ عام اورنگٹن کی طرح بھورا ہونے کے بجائے سفید ہے۔

البانزم کی یہ بیماری انسانوں اور دوسرے جانوروں میں بھی پائی جاتی ہے۔

تاہم جانوروں میں یہ بیماری انہیں اپنے ہم نسلوں سے ممتاز اور منفرد بنا دیتی ہے۔

اس وقت دنیا میں واحد البینو اورنگٹن البا نامی مادہ اورنگٹن ہے۔ اسے ایک شخص کی قید سے رہائی دلائی گئی تھی جس نے اسے پنجرے میں قید کر رکھا تھا۔

البا کو جنگل میں نہیں چھوڑا جاسکتا کیونکہ اپنے سفید بالوں اور انفرادیت کی وجہ سے یہ شکاریوں کا خاص ہدف بن سکتی ہے۔

اسے ایک جزیرے پر منتقل کیا گیا ہے جس کا ماحول تقریباً اس کی قدرتی رہائش گاہ جیسا ہی ہے۔

البا اس جزیرے پر دوسرے اورنگٹنز کے ساتھ مزے سے رہ رہی ہے جہاں وہ دل بھر کے اپنے پسندیدہ پھل کھاتی ہے۔


بحوالہ نیشنل جیوگرافک

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں