The news is by your side.

Advertisement

80 فیصد کسٹم ٹیکس پورٹ سے آتا ہے: علی زیدی

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کا کہنا ہے کہ 80 فیصد کسٹم ٹیکس پورٹ سے کلیکٹ ہوتا ہے جبکہ 80 فیصد ایکسپورٹ امپورٹ ٹریڈ بھی پورٹ سے ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں سمندر کے قریب انڈسٹریز لگتی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت نے کراچی کے لیے بہت فنڈنگ پروجیکٹس کیے، کچھ چیزیں ہم نے بہت اچھی کیں اور کچھ نہیں کر سکے۔

علی زیدی کا کہنا تھا کہ بہت سی تکنیکی چیزیں وقت کے ساتھ پتہ چلیں، لوگوں کو بحری امور کے بارے میں زیادہ علم نہیں ہے، عمران خان سے زیادہ کسی نے وزارت بحری امور کو اتنی تفصیل سے نہیں دیکھا۔

انہوں نے کہا کہ میری ٹائم کے بارے میں مشہور تھا کہ بہت کھانچے لگتے ہیں، 80 فیصد کسٹم ٹیکس بھی پورٹ سے کلیکٹ ہوتا ہے، 80 فیصد ایکسپورٹ امپورٹ ٹریڈ بھی پورٹ سے ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں سمندر کے قریب انڈسٹریز لگتی ہیں۔ پیٹرولیم مصنوعات اور کوئلہ سمندر کے ذریعے ہی آتا ہے۔

علی زیدی کا کہنا تھا کہ ماہی گیری کو بحری امور میں خاص اہمیت حاصل ہے، بہت سارے پاور پروڈیوسنگ پلانٹ پورٹ قاسم پر لگے ہوئے ہیں، دنیا بھر میں سمندر کے قریب پراپرٹی مہنگی ہوتی ہے، ہمارے بیچ فرنٹ پر انکروچمنٹ کردی گئی۔

انہوں نے کہا کہ کے پی ٹی کا سنہ 2010 سے آڈٹ نہیں ہوا تھا، کے پی ٹی کی زمینوں پر تجاوزات قائم ہیں۔ 900 سے زائد کیسز میں اسٹے آرڈر ہیں۔ کے پی ٹی کا ورکشاپ 14 سال سے بند ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں