The news is by your side.

Advertisement

’ریٹائرمنٹ سے آگاہ کرنا چاہتا تھا رمیز راجہ نے وقت نہ دیا‘

کراچی: قومی ٹیم کے سابق آل راؤنڈر محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ ریٹائرمنٹ سے متعلق رمیز راجہ کو آگاہ کرنا چاہتا تھا لیکن انہوں نے وقت نہ دیا، انہیں لگا کسی اور مقصد کے لیے ملنا چاہ رہا ہوں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے محمد حفیظ نے میزبان کے معصومانہ سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ رمیز راجہ کو کرکٹ کی سمجھ بوجھ سے متعلق بیان جذبات میں نہیں دیا تھا، اصولوں پر سمجھوتا نہیں کرتا اس لیے کبھی بورڈ کی آنکھوں کا تارا نہیں رہا، جہاں بھی کچھ غلط ہوا اس کے خلاف آواز بلند کی۔

ریٹائرمنٹ پر کوئی افسوس نہیں

سابق کپتان نے کہا کہ ریٹائرمنٹ پر کوئی افسوس نہیں ہے ملک کے لیے بہترین کرکٹ کھیلا ہوں۔

کسی نے میچ فکسنگ کی کوئی آفر نہیں کی

محمد حفیظ نے کہا کہ مجھے کبھی کسی نے میچ فکسنگ کی کوئی آفر نہیں کی، میچ فکسرز کے ساتھ کھیلنے کو منع کیا تو نجم سیٹھی نے کہا کہ آپ کو نہیں کھیلنا تونہ کھیلیں عامر تو کھیلے گا، ان کے بیان کے بعد سوچا مجھے نہیں کھیلنا چاہیے لیکن پھر گھر جاکر بیگم اور دوستوں سے مشورہ کیا اور پاکستان کے لیے کھیلنے کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ نجم سیٹھی کو بطور صحافی مانتا ہوں لیکن انہیں چیئرمین پی سی بی بنا دیا گیا انہیں کرکٹ کا کیا پتا تھا۔

بولنگ ایکشن سے متعلق امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہیے

بولنگ ایکشن سے متعلق سوال پر حفیظ نے کہا کہ بولنگ ایکشن سے متعلق امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہیے، بولنگ ایکشن رپورٹ ہونے کے بعد کلیئر ہوا اور پھر دوبارہ بولنگ کرکے کامیابی حاصل کی۔

پی سی بی عہدیداروں سے باز پرس ہونی چاہیے

سابق سی ای او پی سی بی وسیم خان سے متعلق انہوں نے کہا کہ وہ تین سال تک کامیابی سے فیل ہوتے رہے، کھلاڑیوں سے میچ کے بعد کارکردگی کا پوچھا جاتا ہے، پی سی بی عہدیداروں سے ان کی کارکردگی کا کیوں نہیں پیچھا جاتا، پی سی بی عہدیداروں سے باز پرس ہونی چاہیے۔

انہوں ںے کہا کہ پاکستان کرکٹ کا موازنہ آسٹریلیا اور انگلینڈ سے نہیں کیا جاسکتا، آسٹریلیا اور انگلینڈ ویلفیئر اسٹیٹ ہیں پاکستان نہیں۔

وزیراعظم سے ملا تو پی سی بی برا لگا تو مجھے فرق نہیں پڑتا

سابق کپتان نے کہا کہ وزیراعظم سے ملنے کے معاملے پر پی سی بی کو برا لگا لیکن مجھے فرق نہیں پڑتا میرے ساتھی کھلاڑیوں مصباح الحق اور اظہر علی کو مشکلات جھیلنے پڑیں۔

انشا اللہ عمران خان اگلی بار بھی وزیراعظم بنیں گے

محمد حفیظ نے کہا کہ عمران خان کا سپورٹر تھا اور رہوں گا، انشا اللہ وہ اگلی بار بھی وزیراعظم بنیں گے، افسوس ہے عمران خان کے ہوتے ہوئے اسپورٹس میں اصلاحات نہیں ہوئیں۔

ورلڈ کپ سیمی فائنل میں ڈیوڈ وارنر کے حفیظ کی نوبال پر چھکا مارنے کے سوال پر حفیظ نے کہا کہ ہر شخص کی اپنی زندگی کے اصول ہیں، مجھے موقع ملتا تو کبھی ایسا نہیں کرتا اور بال کو چھوڑ دیتا۔

سیاست میں خدمت کرنے کا موقع ملا تو آؤں گا

محمد حفیظ نے کہا کہ سیاست میں خدمت کرنے کا موقع ملا تو آؤں گا لیکن ابھی تک سیاست میں آنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، عمران خان نے پی ٹی آئی میں آنے کی آفر کی تو سوچوں گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں