تازہ ترین

جام شورو انڈس ہائی وے پر خوفناک حادثہ، 6 افراد جاں بحق

کراچی : جام شورو انڈس ہائی وے پر ٹریفک...

آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان معاہدے پر امریکا کا ردعمل

واشنگٹن: امریکا نے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)...

مسلح افواج کو قوم کی حمایت حاصل ہے، آرمی چیف

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل عاصم منیر کا کہنا ہے...

ملت ایکسپریس واقعہ : خاتون کی موت کے حوالے سے ترجمان ریلویز کا اہم بیان آگیا

ترجمان ریلویز بابر رضا کا ملت ایکسپریس واقعے میں...

تمام اسمارٹ فونز کے لیے ایک چارجر

اسمارٹ فونز کمپنیاں فون کے ساتھ اپنے چارجر فراہم کرتی ہیں جبکہ آئی فون کا چارجر کسی دوسرے موبائل فون میں کام نہیں کرتا اور بہت سے اسمارٹ فونز بھی ایسے ہیں جس میں کسی دوسرے موبائل فون کا چارجر نہیں لگایا جاسکتا ہے۔

لیکن بہت جلد سب فونز میں ایک ہی چارجنگ کیبل کو استعمال کرنا ممکن ہوسکے گا جس کا فیصلہ بھی جلد متوقع ہے۔

یورپی یونین کی جانب سے اسمارٹ فونز، ٹیبلیٹس اور وائرلیس ہیڈفونز کے لیے صرف یو ایس بی چارجنگ پورٹ استعمال کرنے کا فیصلہ 7 جون کو متوقع ہے۔

اگر یہ فیصلہ ہوتا ہے تو یورپی ممالک میں ان ڈیوائسز کی فروخت اسی وقت ممکن ہوسکے گی جب ان میں چارجنگ کے لیے یو ایس بی سی پورٹ دی جائے گی۔

البتہ یہ فیصلہ ڈیوائس کی چارجنگ پورٹ کے لیے ہوگا اور اڈاپٹر کی فراہمی اس کا حصہ نہیں، ابھی یہ واضح نہیں کہ 7 جون کو یہ فیصلہ ہونے پر کمپنیوں پر اس کا اطلاق کب تک ہوگا۔

خیال رہے کہ ایسی رپورٹس سامنے آرہی ہیں کہ ایپل کی جانب سے آئی فونز میں یو ایس بی سی پورٹ کی آزمائش کی جارہی ہے جو 2023 میں متعارف کرائے جاسکتے ہیں۔

ان رپورٹس میں یہ دعویٰ بھی کیا گیا کہ ایپل کی جانب سے ایک ایسے اڈاپٹر کو بھی تیار کیا جارہا ہے جو یو ایس بی سی پورٹ سے لیس نئے آئی فونز میں لائٹنگ کنکٹر ایسیسریز کا استعمال ممکن بنا سکے گا۔

Comments

- Advertisement -