The news is by your side.

Advertisement

دہشتگرد تنظیم کو فنڈ دینے کا الزام، سابق برطانوی ملکہ حسن گرفتار

لندن : برطانوی پولیس سابق ملکہ حسن امانی نور کو دہشت گرد تنظیم داعش کے رکن سے شادی کرنے اور تنظیم کو 35 پاؤنڈ کی رقم عطیہ دینے کے الزام میں گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کی سابق ملکہ حسن اور کم عمر دو شیزہ امانی نور پرداعش کے ایک جنگجو کے ساتھ انٹرنیٹ پر شادی رچانے اور تنظیم کو 35 پاﺅنڈ کی رقم عطیہ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے، امانی نور لیور پول کے سابق کھلاڑی شی اوگو کی گرل فریںڈ بھی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اس نے انٹرنیٹ پر ایک تقریب میں داعش کے ایک جنگجوسے شادی کی تھی اور اسے ایک دہشت گرد گروہ کو 35 پاؤنڈ کی رقم فراہم کرنے پر گرفتار کیا گیا۔

دہشت گرد تنظیم داعش کے ایک سرکردہ حکیم نامی کمانڈر نے امانی نور کو اس کی 20 ویں سالگرہ پرمبارک باد کا پیغام بھیجا۔ یہ پیغام دونوں کےدرمیان تعلقات کےقیام کا ذریعہ بن گیا۔

حال ہی میں جب پولیس نے لندن میں امانی کے گھر پر چھاپہ مارا تو وہاں سے ہوائی جہاز کی ایک ٹکٹ بھی برآمد ہوئی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ امانی ترکی کے راستے شام جانے کی خواہاں تھی۔اس کے فلیٹ سے پولیس کو کچھ مکتوبات بھی ملے ہیں، اس کے کریم سینٹ نامی شخص اور ویکٹوریا ویبسٹ نامی ایک خاتون کے ساتھ بھی روابط پائے گئے ہیں، اس پر دہشت گردی کے تین الزامات عاید کیے گئے ہیں۔

عدالت میں بیان دیتے ہوئے امانی نورنے 35 آسٹریلوی پاﺅنڈ داعش یا دہشت گردی کی مدد کے لیے نہیں اس نےشام میں بچوں اور خواتین کی خوراک خریدنے کے لیے یہ رقم ارسال کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں