The news is by your side.

Advertisement

دہشت گرد کابل کے بجائے اسلام آباد کو نشانہ بنا سکتے ہیں، امریکی وزیرخارجہ

واشنگٹن : امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن نے کہا ہے کہ پاکستان کے ساتھ تعلقات پالیسی کا اہم حصہ ہے گو گزشتہ چند سالوں میں پاکستان سے تعلقات میں خرابیاں آئی ہیں لیکن اب بھی امریکا کی پاکستان سے کئی معاملات پر بات چیت جاری ہے جوکہ خوش آئند بات ہے.

ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ریکس ٹلرسن کا کہنا تھا کہ امریکا کو پاکستان کے استحکام کی فکر ہے اور پاکستان پر اپنی توقعات واضح کرنا چاہتے ہیں اور یہ بھی کہ دہشت گرد اب کابل کے بجائے اسلام آباد کو ہدف بنا سکتے ہیں.

امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن نے کہا ہے کہ دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑنے کے لیے پاکستان سے مل کر مثبت انداز میں کام کر رہے ہیں جسے جاری رکھنا بھی چاہتے ہیں اور جس کے لیے پاکستان سے انٹیلی جنس معلومات کے تبادلے کیلئے بھی تیار ہیں.

ریکس ٹلرسن نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کو کامیاب ہوتے دیکھنا چاہتے ہیں لیکن موجودہ حالات میں پاکستان سے بات آگے نہیں بڑھ پا رہی ہے تاہم امریکا امن کی مکمل بحالی کے لیے افغانستان میں مقیم رہے گا جہاں طالبان مذاکرات کر کے افغان حکومت میں شامل ہوسکتےہیں.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں