site
stats
پاکستان

ایک عورت نے کہا تم لوگوں کی جانوں کو خطرہ ہے، والدہ امجد صابری

کراچی :امجد صابری کے اہل خانہ نے انکشاف کیا ہے کہ مشکوک افراد ان کا پیچھا کررہے ہیں، تین ماہ قبل ایک خاتون نے آگاہ کیا تھا کہ آپ لوگوں کی جان کو خطرہ ہے اسی لیے ملک چھوڑنا چاہتے ہیں۔

یہ بات امجد صابری کے بھائیوں اور والدہ نے اے آر وائی نیوز کے معروف پروگرام الیونتھ آور کے میزبان وسیم بادامی سے براہ راست گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ پروگرام میں انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب بھی براہ راست موجود تھے۔

والدہ امجد صابری کا کہنا تھا کہ ہمیں اپنے ملک سے بہت پیار ہے اور لیاقت آباد سے تو پرانی یادیں وابستہ ہیں یہی وجہ کہ جب بھی کوئی ہمیں ڈیفنس یا کسی پوش علاقے میں منتقل ہونے کا کہتا تھا تو ہم یہی کہا کرتے تھے کہ سارے بچے یہی پلے بڑھے ہیں اور شروع سے ہمارا مسکن یہی رہا ہے اور آگے بھی یہی رہے گا۔


 اہل خانہ کے مکمل انٹرویو کی ویڈیو خبر کے آخر میں ملاحظہ کیجیے


لیکن اب حالات تبدیل ہو چکے ہیں ہم سب اس صدمے سے باہر نکل نہیں پائے ہیں جب کہ ہر وقت یہی خطرہ لاحق رہتا ہے کہ کہیں کوئی کسی دوسرے بیٹے کو نقصان نہ پہنچا دے اس لیے چاہتے ہیں کہ کچھ عرصے کے لیے بیرون ملک منتقل ہوجائیں تو کچھ ذہنی آسودگی حاصل ہو جائے گی۔

امجد صابری کے بھائی عظمت صابری نے کہا کہ بھائی کی شہادت کو قریب نو ماہ وقت گزر چکا ہے اس دوران کئی مشکلات کا سامنا رہا ہے اور خوف زدہ بھی ہیں لیکن اس میں اضافہ اس وقت ہوا جب 3 ماہ قبل مشکوک خاتون گھر آئی تھیں جنہوں نے کہا کہ آپ کے اہل خانہ کو خطرہ لاحق ہے۔

عظمت صابری نے مزید بتایا کہ پہلے تو ہم نے ان خاتون کی باتوں کو سنجیدہ نہیں لیا لیکن جب یہ مشاہدہ کیا کہ کچھ مشکوک لوگ ہمارا پیچھا کرتے ہیں اور گھر کی نگرانی کی بھی جاتی ہے تو قریبی پولیس اسٹیشن اور رینجرز کو اطلاع دی۔

مشکوک خاتون کی ویڈیو ہمارے پاس ہے

انہوں نے کہا کہ مذکورہ مشکوک خاتون کی ویڈیو بھی ہمارے پاس ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ انہوں نے کس قسم کی گفتگو کی ہے اس لیے ہم سب فی الحال برطانیہ منتقل ہونا چاہتے ہیں کیوں کہ وہاں ہمارے ایک بھائی پہلے ہی مقیم ہیں۔

امجد صابری کے دوسرے بھائی طلحہ صابری نے میزبان وسیم بادامی سے بات کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ان کے اہل خانہ کو پاسپورٹ اور ویزے کے جلد از جلد فراہمی اور اس دوران ہونے والے اخراجات مہیا کیے جائیں گے کیوں کہ بھائی کے انتقال کے بعد سے ہمارے مالی حالات اچھے نہیں رہے۔

طلحہ صابری نے کہا کہ امجد صابری شہید کی گاڑی اور موبائل فونز وغیرہ ابھی تک پولیس کی تحویل ہیں اور ابھی تک ہمیں واپس نہیں کی گئی ہیں اگر ہمیں آگاہ کردیا جائے کہ کب تک یہ چیزیں ہمارے حوالے کر دی جائیں گے تو ہمارے لیے بہتر ہو گا۔

مشکوک افراد کی جانب سے نگرانی اور عورت کے بیان سے متعلق علم نہیں، راجہ عمرخطاب

اس موقع پر انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب نے کہا کہ امجد صابری کی گاڑی اور موبائل فونز عدالت کی تحویل میں ہیں جو بہ طور کیس پراپرٹی عدالت کے پاس امانتاً موجود ہیں جس کی حوالگی کی درخواست لگائی گئی تھی لیکن فی الحال اس کا فیصلہ نہیں آیا ہے۔

راجہ عمر خطاب نے کہا کہ امجد صابری کے گھر آس پاس مشکوک افراد کی نقل وحمل یا ان کی آمد و رفت کی نگرانی کرنے سے متعلق شکایت کا مجھے علم نہیں لیکن الیونتھ کی توسط سے یہ بات مجھ تک پہنچ چکی ہے تو میں نے یقین دلانا چاہتا ہوں کہ امجد صابری کے اہل خانہ پولیس سمیت سارے ملک کے لہیے محترم ہیں اور ان کی حفاظت کے لیے ہر راست قدم اٹھایا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top