The news is by your side.

Advertisement

انجلینا جولی کا خواتین کے حقوق کے لیے ایک اور قدم

ہالی وڈ کی معروف اداکارہ انجلینا جولی لندن کے اسکول آف اکنامکس سے منسلک ہوگئیں۔ اب اداکاری کے ساتھ وہ پروفیسر بھی بن گئی ہیں۔

ہالی وڈ کی مشہور اداکارہ اور اقوام متحدہ کی مہاجرین کے لیے خیر سگالی سفیر انجلینا جولی لندن اسکول آف اکنامکس کے ساتھ بحیثیت وزیٹنگ پروفیسر منسلک ہوئی ہیں جہاں وہ ایک سال تک سینٹر فار ویمن، پیس اینڈ سیکیورٹی میں ماسٹرز کے طلبہ کو پڑھائیں گی۔

aj-3

انجلینا اس دوران مہاجرین کے حقوق اور خواتین پر کیے جانے والے مظالم کے حوالے سے بھی کام کریں گی۔ اس موقع پر انہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے لیے ضروری ہے کہ ہم زیادہ سے زیادہ خواتین کے حقوق پر بات کریں اور عورتوں پر ہونے والے ظلم کے خاتمے کی کوشش کرتے رہیں۔

انجلینا جولی برطانیہ کے سابق سیکریٹری خارجہ ولیم ہیگ کے ساتھ مل کر 2012 میں جنگ زدہ علاقوں میں خواتین کے جنسی استحصال کے خلاف ایک عالمی مہم کا آغاز کر چکی ہیں۔ اس مہم کا آغاز بوسنیا کی 1992 سے 1995 تک ہونے والی جنگ کے تناظر میں کیا گیا جس کے دوران وہاں 20 ہزار خواتین کا ریپ کیا گیا تھا۔

انجلینا جولی کے ساتھ ولیم ہیگ کو بھی لندن اسکول آف اکنامکس میں وزیٹنگ پروفیسر مقرر کیا گیا ہے۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ یہ کورس ان کے مقصد کے حصول میں معاون ثابت ہوگا۔

aj-2

انجلینا جولی اور ولیم ہیگ جنگ زدہ علاقوں میں خواتین کے جنسی استحصال کے موضوع پر 2014 میں لندن میں ایک عالمی کانفرنس کی میزبانی بھی کر چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں