کراچی میں ایک اور سرکاری گاڑی گن پوائنٹ پر چھین لی گئی govt vehicle snatched in Karachi
The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں ایک اور سرکاری گاڑی گن پوائنٹ پر چھین لی گئی

کراچی: شہرقائد کے علاقے سچل سے گن پوائنٹ پر ایک اور سرکاری گاڑی چھین لی گئی، سرکاری گاڑی سندھ اسمبلی کے افسران کو الاٹ تھی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے سچل سے گن پوائنٹ پر ایک اور سرکاری گاڑی چھین لی گئی، گاڑی سندھ اسمبلی کے افسران کو الاٹ تھی، گاڑی کا نمبر جی ایس ایس 748 ہے، سرکاری افسر دوستوں سے ملنے آیا ملزمان نے اسلحہ کے زور پر گاڑی چھین لی۔

سچل میں سرکاری گاڑی چھیننے کا مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلیا گیا، مقدمہ سرکاری افسر کے ملازم فرحان علی کی مدعیت میں تھانہ سچل میں درج کیا گیا۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق گاڑی میں سوار ملازم کو گن پوائنٹ پر اتارا اور گاڑی لے کر فرار ہوگئے، پولیس کا کہنا ہے کہ گاڑی کی تلاش شروع کردی گئی ہے اور واقعے کی مزید تفتیش بھی جاری ہے۔

مزید پڑھیں: میئر کراچی وسیم اختر کی گاڑی گن پوائنٹ پر چھن گئی

واضح رہے کہ گزشتہ روز میئر کراچی کے اہلخانہ کے زیر استعمال سرکاری گاڑی چھینی گئی تھی، واقعہ ڈیفنس خیابان بخاری میں پیش آیا تھا، جہاں مسلح ملزمان نے اسلحہ کے زور پر ان کے ڈرائیور سے گاڑی چھینی۔

سی پی ایل سی کی رپورٹ کے مطابق کراچی میں ڈیڑھ سال کے دوران 27 گاڑیاں چھینی جاچکی ہیں زیادہ تر گاڑیاں ڈیفنس اور کلفٹن سے چھینی گئی جن کا مقدمات درخشاں تھانے میں درج ہیں۔

امن و امان کی صورت حال،  وزیراعلیٰ سندھ نے آج اجلاس طلب کرلیا

امن و امان کی صورت حال پر وزیر اعلیٰ سندھ نے آج اجلاس طلب کرلیا ہے، اجلاس میں چیف سیکریٹری سندھ، آئی جی سندھ، سیکریٹری داخلہ ودیگر حکام کو طلب کرلیا گیا، میئر کراچی وسیم اختر، سیکریٹری اسمبلی کی گاڑیاں کیسے چھنیں وضاحت طلب کرلی گئی۔

اسٹریٹ کرائم پر وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ، ایڈیشنل آئی جی امیر شیخ پر برہم ہوگئے، مراد علی شاہ نے پولیس چیف کی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کیا ہے جبکہ نئے آئی جی سندھ سید کلیم امام کو اپنی ٹیم بنانے کی ہدایت کردی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں