The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: سعودی حکومت کی ایک اور اہم ہدایت

ریاض: کروناوائرس کے پیش نظر سعودی محکمہ صحت نے میڈیکل اسٹورز کو ہدایت کی ہے کہ کسی بھی شہری کو ایک ہینڈسینیٹائزر اور 10 سرجیکل ماسک سے زیادہ فروخت نہ کریں۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق اس اقدام کا مقصد مملکت میں سرجیکل ماسک اور ہینڈسینیٹائزر کی قلت نہ آنے دینا ہے۔ محکمہ صحت نے متعلقہ اداروں کو ہدایت پر سختی سے عمل کرنے کا حکم دے دیا۔

سعودی محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ تمام میڈیکل اسٹورز میں کام کرنے والے افراد(فارمیسز) کو ہینڈ سینیٹائزر اور میڈیکل ماسک محدود تعداد میں فروخت کرنے کا پابند کیا گیا ہے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ ہر شہری کو ایک سے زیادہ سینیٹائزر کی بوتل اور 10 سرجیکل ماسک سے زیادہ فروخت نہیں کیا جائے گا۔

جبکہ میڈیکل ماسک این 95 جو کرونا وائرس کے لیے مخصوص ہیں ایک شخص کو 2 سے زیادہ فروخت نہیں کیا جائے گا تاکہ ان کی قلت نہ ہو اور زیادہ سے زیادہ تعداد میں لوگ مستفید ہوسکیں۔

سعودی عرب میں کرفیو سخت، اضافی پابندیاں عائد کردی گئیں

دوسری جانب مدینے کے 6 محلوں کے رہائشیوں پر اضافی پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔ مذکورہ رہائشیوں پر انتہائی ناگزیر حالات کے علاوہ آنے جانے پر مکمل طور پر پابندی ہے۔

نئی پابندیوں کے تحت تمام شہریوں کو 24 گھنٹے گھروں میں رہنے کی تلقین کی گئی ہے۔ مدینہ منورہ کے محلے الشریبات، بنی ظفر، قربان، الجمعہ، بنی خدرہ اور اسکان میں پابندیوں کا اطلاق ہوگیا جو دو ہفتوں تک جاری رہے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں