The news is by your side.

Advertisement

ڈینگی وائرس: پنجاب میں ایک اور مریض دم توڑ گیا

خوشاب: پنجاب میں ڈینگی وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کا سلسلہ رک نہیں سکا ہے، آج ڈینگی سے ضلع خوشاب کے علاقے اسلام پورہ کا 3 سالہ بچہ دوران علاج دم توڑ گیا، اب تک خوشاب میں ڈینگی کے 50 مریض رپورٹ ہو چکے ہیں۔

یونی ورسٹی آف ہیلتھ سائنس کے وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اکرم نے کہا ہے کہ لاہور میں ڈینگی وائرس کی 3 اقسام پائی گئیں، ڈینگی وائرس کے تدارک کے لیے مربوط کوآرڈینیشن ضروری ہے، عوام گھروں یا اطراف میں پانی کھڑا نہ ہونے دیں۔

آج فیصل آباد کے الائیڈ اسپتال میں ڈینگی کے مزید 5 مریض داخل ہوئے، اسپتال ذرایع کے مطابق فیصل آباد میں رواں سال رپورٹ ہونے والے ڈینگی مریضوں کی تعداد 166 ہو گئی، سرگودھا میں بھی محکمہ صحت نے 24 گھنٹے میں ڈینگی کے مزید 4 کیسز کی تصدیق کر دی ہے، سرگودھا ایک ماہ میں رپورٹ ہونے والے ڈینگی کیسز کی تعداد 118 ہو گئی۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈینگی نے کب کہاں وبائی صورت اختیار کی، رپورٹ تیار

معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ ڈینگی وائرس میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے، ماحولیاتی تبدیلی ڈینگی جیسے امراض پھیلنے کی وجہ ہیں، تاہم ڈینگی وائرس کے مشتبہ کیسز کی تعداد میں 50 فی صد کمی ہوئی، جب کہ تصدیق شدہ کیسز کی تعداد میں بھی 55 فی صد کمی ہوئی، 35 ہزار کیسز کا مطلب یہ نہیں کہ سب کے سب آج کے ہیں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں ظفر مرزا نے کہا اسلام آباد اور راولپنڈی میں روزانہ کوآرڈینیشن میٹنگ ہوتی ہے، یہاں ڈینگی کے مریضوں کے لیے دواؤں کی قلت نہیں، ڈینگی کیسز کی تصدیق کے بعد متاثرہ مریض کے گھر کے اطراف اسپرے کیا جاتا ہے۔

انھوں نے کہا وفاق اور صوبائی اداروں، وزارتوں میں رابطے کے فقدان کا سامنا رہتا ہے، پاکستان کو ایسا قومی پروگرام دیں گے جس سے ہر محکمے کو اپنے کام کا پتا ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں