The news is by your side.

Advertisement

گجرنالے کے اطراف مکانات گرانے کے خلاف ایک اوردرخواست دائر

کراچی: گجرنالے کے اطراف مکانات گرانے کے خلاف ایک اوردرخواست دائر کردی گئی، علاقہ مکین نے استدعا کی ہے کہ لیز گھروں کو مسمارکرنے سے روکا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں گجرنالے کے اطراف مکانات گرانےکےخلاف ایک اوردرخواست دائر کردی گئی ، درخواست علاقہ مکینوں کی جانب سےدائرکی گئی۔

علاقہ مکین نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ ہمارے گھروں کا گجرنالہ سےکوئی تعلق نہیں، زبانی کہاگیاہےکہ مکانات خالی کردیں، گھروں پر نشانات لگا دیے گئے خدشہ ہے گھرمسمارکردیے جائیں گے۔

درخواست میں علاقہ مکین نے استدعا کی ہے کہ لیزگھروں کومسمارکرنےسےروکا جائے۔

یاد رہے گذشتہ ہفتے سندھ ہائی کورٹ میں گجر نالہ آپریشن روکنے سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی تھئ ، مکینوں نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ ہمارے مکانات پر نشانات لگائےگئے، ہمارے گھر نالے کی حدودمیں نہیں پھربھی نشانات لگائے گئے۔

سندھ ہائی کورٹ نے گجر نالہ آپریشن روکنے سے انکار کرتے ہوئے کہا گجر نالہ آپریشن سپریم کورٹ کی ہدایت پر کیا جا رہا ہے، عدالت
پہلے بھی واضح کر چکےکسی کو حکم امتناع نہیں دیں گے، کسی کو اعتراض ہے تو سپریم کورٹ سےرجوع کرے۔

خیال رہے کراچی کے گجر نالے کو اصل شکل میں بحال کرنے اور نالے پر قائم تجاوزات کے خاتمے کیخلاف آپریشن جاری ہے، نالے کے دونوں اطراف آٹھ آٹھ کلومیٹر تک کچی تجاوزات ہٹادی گئی ۔

ڈائریکٹر اینٹی انکروچمنٹ بشیر صدیقی کاکہنا تھا کہ 70فیصد سے زائد متاثر مکانات کے متاثرین کو دو سال کا کرایہ دیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں