The news is by your side.

زمین کے ایک حصے پر غیر معمولی گرمی: ماہرین نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

حال ہی میں ہونے والی ایک تحقیق سے پتہ چلا کہ کرہ ارض پر آرکٹک کا حصہ 4 گنا رفتار سے گرم ہو رہا ہے، یہ تحقیق حال ہی میں کی گئی ہے۔

اے آر وائی نیوز براہِ راست دیکھیں live.arynews.tv پر

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق گزشتہ 40 سالوں میں زمین کے شمالی حصے آرکٹک میں گرمی کی شرح میں تقریباً 4 گنا سے زیادہ کا اضافہ ہوا ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ موسمیاتی ماڈل قطبی درجہ حرارت کی شرح کے حوالے سے غلط اندازے لگا رہے ہیں۔

اقوام متحدہ کے موسمیاتی سائنس پینل نے 2019 میں ایک خصوصی رپورٹ میں بتایا کہ آرکٹک ایمپلی فکیشن کے نام سے مشہور عمل کی وجہ سے شمالی علاقے عالمی اوسط سے دگنا رفتار سے گرم ہو رہے ہیں۔

یہ اس وقت ہوتا ہے جب برف اور گلیشیئرز، سورج کی روشنی اور حرارت سے پگھل کر پانی کی شکل میں سمندر کا حصہ بن جاتے ہیں۔

سائنسدانوں کے درمیان ایک طویل عرصے سے اتفاق رائے ہے کہ شمالی علاقے تیزی سے گرم ہو رہے ہیں تاہم اس حوالے سے ٹائم فریم پر سب کے اندازے مختلف ہیں جبکہ اس بات پر بھی اختلاف ہے کہ آرکٹک کا علاقہ جغرافیائی لحاظ سے کہاں تک پھیلا ہوا ہے۔

اس تحقیق کے لیے ناروے اور فن لینڈ میں مقیم محققین کی ایک ٹیم نے 1979 سے آرکٹک سرکل کے سیٹیلائٹ اسٹڈیز کے ذریعے جمع کیے گئے درجہ حرارت کے ڈیٹا کے چار سیٹ کا تجزیہ کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں