The news is by your side.

Advertisement

آرمینیا اور آذر بائیجان : خونریز جنگ جاری، ہلاکتوں کی تعداد 84 ہوگئی

باکو : آرمینیا اور آذر بائیجان کے درمیان ہونے والی خونریز جھڑپیں جاری ہیں، ان جھڑپوں میں اب تک 84افراد ہلاک اور اور 200سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔ ترکی نے بھی آذربائیجان کو مکمل حمایت کی یقین دہانی کرادی۔

آذربائیجان اور آرمینیا کے سرحدی علاقے نگورنو کاراباخ میں دونوں ممالک کے مابین جھڑپیں ہوئی ہیں جن میں فضائی حملوں، میزائلوں اور بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا جارہا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق پاکستان سمیت یورپی یونین، روس اور دیگر ممالک نے دونوں فریقین کو جنگ بندی کرنے پر زور دیا ہے۔

موجودہ صورتحال پر غور کے لئے سلامتی کونسل کا بند کمرہ اجلاس آج متوقع ہے، اطلاعات کے مطابق اب تک جھڑپوں کی زد میں آکر میں دونوں ممالک کے شہری ہلاک اور زخمی بھی ہوئے ہیں۔

پاکستان نے آرمینیا کی افواج کی آذربائیجان پر گولہ باری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سلامتی کونسل میں کارا باخ کے حل کے لیے منظور قراردادوں کی روشنی میں پاکستان آذربائیجان کے موقف کا حامی ہے۔

ترکی نے آذربائیجان کو مکمل حمایت کی یقین دہانی کرادی

ترک صدر رجب طیب اردوگان نے آرمینیا کے ساتھ جاری کشیدی میں آذر بائیجان کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا کو جارحیت کا نشانہ بننے والے ملک کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے۔

ترک صدر نے آذر بائیجان کے صدر الہام علیوف سے فون پر بات کرتے ہوئے انہیں مکمل حمایت کا یقین دلایا ہے جبکہ اقوامِ متحدہ،یورپی یونین، روس اور ایران نے فوری جنگ بندی کی اپیل کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں