The news is by your side.

Advertisement

کیلی فورنیا میں مسجد نذر آتش، ایک شخص زخمی

واشنگٹن : امریکی ریاست کیلی فورنیا میں سفید فام نسل پرست نے مسجد کو نذر آتش کردیا تاہم آتشزدگی کے واقعے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست کیلی فورنیا کے جنوبی علاقے میں واقع دارالارقم مسجد پر نامعلوم نسل پرست دہشت گردوں نے حملہ کرکے نذر آتش کردیا تاہم مسجد میں موجود افراد نے اہنی مدد آپ کے تحت آگ پر قابو پایا جس کے باعث مسجد کو زیادہ نقصان نہیں پہنچا۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ اتوار کی صبح مسجد کو نذر آتش کرنے والے دہشت گرد نے مسجد کی دیوار پر اسپرے سے نیوزی لینڈ میں مسجد پر حملے کا حوالہ بھی دیا جس میں 50 مسلمان بے گناہ شہید کیے گئے تھے۔

میڈیا کو واقعے کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے ایسکونڈیڈو کے پولیس ترجمان کا کہنا تھا کہ مقامی اور وفاقی حکومت واقعے کی تحقیقات نفرت آمیز اور نسل پرستی کی بنیادوں پر کررہے ہیں تاہم پولیس ترجمان نے یہ نہیں بتایا کہ حملہ آور سے اسپرے سے لکھا کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ مسجد میں صبح 3 بجے ہونے والی آتشزدگی کے دوران ایک شخص زخمی ہوا جبکہ دارالارقم مسجد کے بیرونی حصّے کو نقصان پہنچا۔

میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ کیلی فورنیا پولیس ابھی تک واقعے میں ملوث ملزمان کو شناخت اور گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے۔

پولیس ترجمان نے میڈیا کو بتایا کہ مسجد پر آتشزدگی کے حملے کے فوراً بعد رات بھر میں مسجد میں عبادت کرنے والے افراد نے فوری طور پر آگ بجھائی جس کے باعث صرف مسجد کے بیرونی حصّے کو نقصان۔

مزید پڑھیں : نیوزی لینڈ کی 2 مساجد میں فائرنگ‘ 49 افراد جاں بحق

یاد رہے کہ رواں ماہ 15 تاریخ کو نیوزی لینڈ کے تیسرے بڑے شہر کرائسٹ چرچ میں سفید فام نسل پرست دہشت گرد نے دو مساجد پر نماز جمعہ کے دوران دو مساجد پر حملے کرکے پچاس نمازیوں کو شہید جبکہ درجنوں کو زخمی کردیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں