جعلی اکاؤنٹس کیس ، سابق صدر آصف زاردی اور ان کی ہمشیرہ چوتھی بار طلب
The news is by your side.

Advertisement

جعلی اکاؤنٹس کیس ، سابق صدر آصف زاردی اور ان کی ہمشیرہ چوتھی بار طلب

کراچی : جعلی اکاؤنٹس کیس میں ملوث سابق صدر آصف زاردی اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کو ایف آئی اے نے چوتھی بار طلب کرلیا گیا جبکہ عدالت نے انور مجید اور عبدالغنی مجید کو 27 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ منی لانڈرنگ اسکینڈل ایف آئی اے نے سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کو چوتھی بار طلب کرلیا، سابق صدر اور ان کی بہن کو 27 اگست پیر کی صبح گیارہ بجے پیش ہونے کے لیے نوٹس جاری کر دئیے گئے۔

ایف آئی اے کی جےآئی ٹی دونوں سے جعلی اکاؤنٹس سے متعلق پوچھ گچھ کریں گی۔

اس سے قبل بھی آصف زرداری اور فریال تالپور کو تین بار طلب کیا گیا تھا تاہم دونوں پیش نہیں ہوئے جبکہ سابق صدر اور ان کی ہمشیرہ نے عدالتوں سے ضمانت لے رکھی ہے۔

دوسری جانب عدالت نے انو ر مجید کو مزید 27 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کردیا ہے۔

مزید پڑھیں : سابق صدرآصف زرداری نے حفاظتی ضمانت حاصل کرلی

یاد رہے 17 اگست کو کراچی کی بینکنگ عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں ایف آئی اے کی استدعا منظور کرتے ہوئے سابق صدر آصف زرداری سمیت دیگر مفرور ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے۔

ناقابل ضمانت وارنٹ جاری ہونے کے بعد آصف زرداری نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے حفاظتی ضمانت حاصل کرلی جب کہ فریال تالپور سمیت کیس کے 4ملزمان نے گرفتاری سے بچنے کے لیے عبوری ضمانت لے رکھی ہے۔

واضح رہے کہ جعلی بینک اکاؤنٹس کے ذریعے منی لانڈرنگ کرنے کے کیس میں آصف زرداری اور فریال تالپور بھی نامزد ہیں۔

خیال رہے ایف آئی اے نے ایک رپورٹ میں 3 بینکوں میں 29 جعلی اکاؤنٹس کی نشان دہی کی تھی جن کے ذریعے 35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں