The news is by your side.

Advertisement

پانامہ لیکس پرحکومت سےکوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا، آصف زرداری

اسلام آباد: آصف زرداری نے کہا ہے کہ پانامہ لیلکس پر حکومت سے کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا، سابق صدر نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی بھی تردید کردی۔

تفصیلات کے مطابق سابق آصف علی زرداری کا پانامہ لیکس کے معاملے پر مفاہمت کرنے سے انکار کردیا، ایک بیان میں سابق صدر آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ پانامہ لیکس کے معاملے پر حکومت سے کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ ان کی لندن میں جمعیت علمائے اسلام(ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کوئی ملاقات نہیں ہوئی، میڈیا کے کچھ حلقوں میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی ہے کہ پاناما لیکس کے معاملے پر میری جانب سے کسی قسم کا سمجھوتا ہو گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ بیان اور ایسی خبریں قطعی غلط، بے بنیاد اور منگھڑت ہیں،ان کا کہنا تھا کہ میڈیا میں بتایا گیا کہ میری مفاہمتی پالیسی کے تحت وزیراعظم نواز شریف کے ساتھ کسی سمجھوتے پر پہنچ گیا ہوں۔

سابق صدر نے نہ صرف ان خبروں کی تردید کی ہے بلکہ یہ بھی کہا ہے کہ پارٹی نے یہ فیصلہ کر لیا ہے کہ پاناما لیکس کے مسئلے کو ہر فورم پر اٹھایا جائے گا اور اسے اس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ایک پارلیمانی کمیٹی پہلے ہی قائم کر دی گئی ہے جو پاناما لیکس کی تحقیقات اور اس کے ٹرم آف ریفرنسز بنارہی ہے اور اس بات کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ پاناما لیکس کی تحقیقات کو نظرانداز کیا جائے۔

سابق صدر نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی نے اس مسئلے پر نہایت سوچ و بچار کے بعد فیصلہ کیا ہے کہ نہ صرف یہ کہ پارٹی کے اندر اس پر مشاورت ہوئی ہے بلکہ دیگر سیاسی پارٹیوں سے بھی مشاورت کے عمل کے بعد پارٹی نے پاناما لیکس پر اپنا موقف اختیار کیا ہے۔ اس بارے میں جو میڈیا رپورٹس آئی ہیں ان میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی ہے کہ پاناما لیکس کے معاملے پر آصف علی زرداری کا موقف پارٹی سے جدا ہے جبکہ یہ بات انتہائی غلط، بے بنیاد اور منگھڑت ہے اور کنفیوژن پھیلانے کے لئے ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں