The news is by your side.

Advertisement

پیپلزپارٹی رہنما خورشید شاہ کے 500 ارب سے زائداثاثوں کا انکشاف

کراچی : پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماخورشید شاہ کے پانچ سو ارب سے زائد اثاثوں کاانکشاف ہوا ہے ، نیب نے خورشید شاہ کے اکاؤنٹس، بے نامی جائیدادوں کی تفصیلات حاصل کرلیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو ( نیب ) نے پیپلزپارٹی کے رہنماخورشید شاہ کے خلاف انتہائی اہم شواہد حاصل کرلیے ، جس میں خورشید شاہ کے پانچ سو ارب سے زائد اثاثوں کاانکشاف ہوا ہے۔

نیب نے خورشیدشاہ کے اکاؤنٹس، بے نامی جائیدادوں ، بدعنوانی سےبنائے گئےاثاثوں اور فرنٹ مین کی تفصیلات بھی حاصل کرلی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خورشید شاہ اور اہلخانہ کے کراچی، سکھر اور دیگر علاقوں میں ایک سو پانچ بینک اکاؤنٹس ہیں ، خورشید شاہ نے اپنے فرنٹ مین پہلاج مل کے نام پر تراسی جائیدادیں بنا رکھی ہیں۔

دستاویز کے مطابق جائیدادیں سکھر، روہڑی، کراچی اور دیگر علاقوں میں بنا ئی گئی ہیں، پہلاج رائے گلیمر بینگلو، جونیجو فلور مل، مکیش فلور مل اور دیگر جائیدادیں بنائیں، مبینہ فرنٹ مین پہلاج نے2015 سےقبل کوئی ٹیکس ادا نہیں کیا۔

نیب دستاویز میں بتایا گیا خورشید شاہ کامبینہ فرنٹ پہلاج معمولی دکان چلاتا تھا ، فرنٹ مین لڈومل کے نام پر11 اور آفتاب حسین سومرو کے نام پر 10 جائیدادیں ہیں۔

مزید پڑھیں : چئیرمین نیب کی خورشید شاہ کیخلاف آمدن سےزائداثاثہ جات پر انکوائری کی منظوری

دستاویز کے مطابق خورشید شاہ نےاعجازپل کے نام پرسکھر اور روہڑی میں 2 جائیدادیں بنائیں ، مبینہ فرنٹ مین کے لیے کارڈیو اسپتال سے متصل ڈیڑھ ایکڑ نرسری الاٹ کرائی۔

نیب کا کہنا تھا کہ خورشید شاہ کی بے نامی جائیدادوں میں عمر جان نامی شخص کا بھی اہم کردار ہے، پی پی رہنما کی زیر استعمال بم پروف گاڑی عمرجان کے نام پررجسٹرہے جبکہ اسلام آباد میں خورشید شاہ کا زیر استعمال گھر بھی عمر جان کے نام پر ہے جبکہ سکھر اور دیگر علاقوں میں ترقیاتی منصوبےعمر جان کی کمپنی کو دلوائےگئے۔

یاد رہے چئیرمین نیب جسٹس ر جاوید اقبال پیپلز پارٹی کے سینیئر رہنما خورشیدشاہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات پر انکوائری کی منظوری دے چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں