The news is by your side.

Advertisement

کورونا ویکسین اور بلیو ٹوتھ : وائرل ویڈیو کی حقیقت سامنے آگئی

کورونا ویکسین کے حوالے سے دنیا بھر میں مختلف قسم کی افواہیں زیر گردش ہیں جن پر کوئی ذی شعور انسان یقین ہی نہیں کرسکتا، اس حوالے سے ایک مضحکہ خیز ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے، رائٹر فیکٹ چیک سروس نے اس ویڈیو کی قلعی کھول دی۔

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو کافی وائرل ہورہی ہے جس میں ویکسی نیشن کرانے والا ایک نامعلوم شخص ویڈیو ریکارڈنگ کرنے والے شخص سے گفتگو  میں یہ دعویٰ کررہا ہے کہ ویکسی نیشن کرانے کے بعدہر چیر برقی اعتبار سے مجھ سے رابطہ کررہی ہے ۔


مذکورہ شخص ویکسی نیشن کرانے کے تجربے کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہتا ہے کہ مسئلہ یہ ہے کہ میں جہاں بھی جاتا ہوں ہر چیز مجھ سے منسلک ہونے کی کوشش کر رہی ہے، جیسے  بلیو ٹوتھ چپ کے ذریعے مجھ سے رابطہ قائم کیا جارہا ہو۔

اس کا کہنا ہے کہ جب میں کار میں سوار ہوتا ہوں تو مجھے محسوس ہوتا ہے کہ میری کار مجھ سے رابطہ قائم کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ میں گھر جاتا ہوں تو میرا کمپیوٹر بھی رابطہ کرنے کی کوشش کرتا ہے بالکل اسی طرح جیسے کوئی مجھ سے میرے فون پر نوٹیفکیشن کے ذریعے  رابطہ کرنے کی کوشش کرتا ہے۔

اسٹرا زینیکا کوویڈ 19 ویکسین کے اجزاء کی مکمل فہرست میں ریکومبیننٹ ، ایل ہسٹائڈائن ، ایل ہسٹیڈائن ہائڈروکلورائڈ مونوہائیڈریٹ، میگنیشیم کلورائد ہیکسہائیڈریٹ ، پولسوربیٹ 80 ، ایتھنول ، سوکروز ، سوڈیم کلورائد ، ڈیزوڈیم ایڈیٹیٹ ڈہائیڈریٹ، انجیکشن کے لئے پانی شامل ہے تاہم ویکسین میں بلیو ٹوتھ چپ کی موجودگی ناممکن موجود نہیں ہے۔

یاد رہے کہ موبائل فون میں بلوٹوتھ آپشن کا نام تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ مثال کے طور پر “AstraZeneca_ChAdOx1-S” کو دکھانے کے لئے کسی بھی موبائل فون کے نام میں ترمیم کی جاسکتی ہے اور موبائل فون اور ٹیلی ویژن پر ویڈیو میں نظر آنے والے نوٹیفکیشن کا اشارہ کرتے ہوئے اسے استعمال کرنے کی درخواست کی جاسکتی ہے۔

بلیوٹوتھ ایک وائرلیس ٹیکنالوجی ہے جو کم فاصلے میں ڈیٹا شیئر کرنے کے لئے قلیل رینج کی ریڈیو لہروں کا استعمال کرتی ہے، بلیوٹوتھ صلاحیتوں کے ساتھ اینٹینا سے چلنے والی چپ سے متعلق  آسٹرا زینیکا کی جزو کی فہرست میں ایسی کسی بھی قسم کی چیز کا کوئی وجود نہیں ہے۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں