بدھ, مئی 22, 2024
اشتہار

نائیجریا میں فرقہ وارانہ کشیدگی، 30 افراد ہلاک

اشتہار

حیرت انگیز

ابوجا: وسطی نائیجریا میں فرقہ وارانہ چرواہوں اور کسانوں کے درمیان خونریز تصادم میں 30 سے ​​زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔  

اے ایف پی کے مطابق یہ واقعہ نائیجریا کے منگو ضلع کے باوئی کے مختلف گاؤں میں ہوا۔  جہاں فرقہ وارانہ کشیدگی کے بعد 30 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ چرواہوں اور کسانوں کے درمیان تصادم ہوا، اس میں چرواہے مسلمان اور کسان عیسائی مذہب سے تعلق رکھتے ہیں۔

- Advertisement -

نائیجریا: بچوں کے اسکول میں خوفناک آتشزدگی، 26 لقمہ اجل بن گئے

مقامی پولیس نے بتایا کہ ہمیں دن کے وقت تقریباً 11 بج کر 56 منٹ پر ایک ہنگامی کال موصول ہوئی جس میں ہمیں اس تشدد واقعے  کی اطلاع ملی کہ فائرنگ ہوئی ہے۔

واقعے کے بعد علاقے میں سکیورٹی اہلکار تعینات کر دیے گئے ہیں اور جس علاقے میں گہما گہمی ہے وہاں 24 گھنٹے کا کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ نائیجیریا میں زیادہ تر مسلمان شمالی علاقے میں رہتے ہیں جبکہ عیسائی جنوب میں رہتے ہیں۔ تقسیم کے حوالے سے ان دونوں برادریوں کے درمیان اکثر لڑائی ہوتی رہتی ہے۔ یہاں کے لوگ برسوں سے ذات پات اور مذہبی تشدد سے نبردآزما ہیں۔

رپوٹ میں بتایا گیا کہ یہاں بھاری ہتھیاروں سے لیس گروہ اکثر گاؤں کو لوٹنے کا کام کرتے ہیں۔ اپریل میں ایک گاؤں پر مسلح افراد کے حملے میں تقریباً 50 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں