یمن میں خودکش دھماکہ،52فوجی جاں بحق -
The news is by your side.

Advertisement

یمن میں خودکش دھماکہ،52فوجی جاں بحق

عدن : یمن کے جنوبی شہر عدن میں فوجی اڈے پر خودکش بم دھماکے میں 52فوجی جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کےمطابق یمن کےشہر عدن میں گزشتہ روز یہ حملہ اس وقت ہوا جب فوجی اڈے پر متعدد اہلکار اپنی تنخواہیں لینے کے جمع ہوئے تھے۔خودکش دھماکے میں کم ازکم 52فوجی جاں بحق اور درجنوں شدید زخمی ہوگئے۔

فوجی کیمپ پرحملہ اس وقت کی گیاجب سپاہی تنخواہوں کی وصولی کےلیےقطار میں کھڑے تھے۔حکام کاکہناہےکہ خودکش بمبار سپاہیوں کے درمیان موجود تھا۔

خود کش حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش سے منسلک یمنی دہشت گردتنظیم نے قبول کرلی ہے۔

خیال رہے کہ یمن میں حکومتی فورسز کی جانب سے چند ماہ قبل داعش اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کےخلاف ملک کے مختلف شہروں میں کارروائیوں کا آغاز کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں:یمن میں فوجی کیمپ پرخودکش حملہ،48افرادجاں بحق

یمن کے شہر عدن ہی میں گزشتہ ہفتے یمن کے جنوبی شہر عدن میں فوجی اڈے پر خودکش بم دھماکے میں 48 فوجی جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔

داعش کی نیوز ویب سائٹ اعماق کی جانب سے جاری بیان میں واقعے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہاگیاتھا کہ’داعش کے ایک رکن نے السولہ بن ملٹری کیمپ میں خود کش دھماکا کیا جہاں یمنی فوج کے اہلکار جمع تھے‘۔

یاد رہے کہ حکومت کی حامی فورسز نے سعودی عرب کی سربراہی میں قائم بین الاقوامی اتحادی فوج کی مدد سے 2015 میں عدن کا کنٹرول سنبھالا تھا۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کے اعدادوشمار کے مطابق خانہ جنگی کے آغاز سےاب تک 7270 افراد مارے جا چکے ہیں جن میں سے زیادہ تر عام شہری ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں