عدالت نے انتظارقتل کیس کی سماعت 10 اکتوبر تک ملتوی کردی -
The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے انتظارقتل کیس کی سماعت 10 اکتوبر تک ملتوی کردی

کراچی : انتظار قتل کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیے کہ تفتیشی افسر کی سست روی کے باعث ملزم طارق رحیم باہرمزے لوٹ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت میں انتظار قتل کیس کی سماعت ہوئی، مقتول کے والد مقصود احمد عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت میں سماعت کے آغاز پرتفتیشی افسر نے بتایا کہ ملزم طارق رحیم کی گرفتاری ممکن نہیں ہوئی، مجھے وارنٹ کی کاپی موصول نہیں ہوئی۔

عدالت نے استفسار کیا کہ آپ کوکاپی نہیں ملی توکیا ہم مقدمے کی سماعت روک دیں؟ آپ کی کارکردگی غیر تسلی بخش ہے۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ کیا وارنٹ کی کاپی آپ کے ہاتھ میں پہنچانا بھی ہماری ذمہ داری ہے؟ آپ کو ذمہ داری کا احساس ہوتا توکاپی کے لیے خود رجوع کرلیتے۔

انسداد دہشت گردی عدالت نے ریمارکس دیے کہ آپ کی تفتیش سست روی کا شکار ہے جس کی وجہ سے ملزم طارق رحیم باہرمزے لوٹ رہا ہے۔

عدالت نے ملزم طارق رحیم کو گرفتار کرکے آئندہ سماعت پر پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 10 اکتوبر تک ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ رواں سال 14 جنوری کو کراچی کے علاقے ڈیفنس میں اینٹی کارلفٹنگ سیل کے اہلکاروں کی فائرنگ سے نوجوان انتظار احمد جاں بحق ہوگیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں