The news is by your side.

Advertisement

لنک روڈ زیادتی کیس: شریک ملزم شفقت کو 164 کا بیان قلمبند کرانے کی اجازت

لاہور : انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے لنک روڈ زیادتی کیس کے شریک ملزم شفقت کو 164 کا بیان قلمبند کرانے کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں لنک روڈزیادتی کیس کی سماعت ہوئی ، خصوصی عدالت کے ایڈمن جج نےسماعت کی۔

دوران سماعت پولیس نے بتایا کہ ملزم شفقت اپنا 164 کا بیان قلمبند کرنا چاہتا ہے ، جس پرزیادتی کیس کے شریک ملزم شفقت کو164 کا بیان قلمبند کرانے کی اجازت دے دی۔

عدالت نے ریکارڈ کی جانچ پڑتال کے بعد ملزم کا بیان قلمبند کرنے کی اجازت دی۔

مزید پڑھیں : لنک روڈ زیادتی کیس : ملزم کے شفقت کے جسمانی ریمانڈ میں 10 روز کی توسیع

یاد رہے 28 اکتوبر کو لنک روڈ خاتون زیادتی کیس میں انسداد دہشت گری عدالت نے ملزم کے شفقت کے جسمانی ریمانڈ میں دس روز کی توسیع کر دی تھی۔

پولیس نے موقف اختیار کیا تھا کہ ملزم شفقت سے گاڑی کاشیشیہ توڑنے والاڈنڈا برآمد کرلیا ہے ۔ تفتیش ابھی جاری ہے، ملزم سے متاثرہ خاتون کے اے ٹی ایم اور نقدی برآمد کرنا باقی ہے۔

اس سے قبل زیادتی کیس میں متاثرہ خاتون نے دونوں ملزموں عابد ملہی اور شفقت کو شناخت کرلیا تھا، ملزمان کی شناخت پریڈکی کارروائی کیمپ جیل میں کی گئی۔

واضح ہے کہ 9 ستمبر کو ملزم شفقت نے عابد علی سے مل کر گجرپورہ میں خاتون سے دوران ڈکیتی زیادتی کی تھی، جس کے بعد پولیس نے شفقت گرفتار کیا، دوران تفتیش شفقت نے خاتون سے زیادتی کا اعتراف کرتے ہوئے بیان میں کہا تھا کہ 9 ستمبر کو وہ اور عابد ڈکیتی کی غرض سے کار کے پاس گئے تھے، پہلے خاتون سے لوٹ مار کی، اور پھر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

مرکزی ملزم عابد ملہی کو واقعہ کے ایک ماہ بعد پولیس نے خود گرفتار کرنے کا دعوی کیا تھا جبکہ ملزم شفقت علی کو دیپالپور سے گرفتار کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں