The news is by your side.

Advertisement

’بانی ایم کیو ایم نے فاروق ستار کو گالیاں دی تھیں‘

کراچی: اے آر وائی نیوز کے دفتر پر حملہ، اشتعال انگیز تقریر اور دیگر مقدمات سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران گواہ نے کہا کہ بانی ایم کیو ایم نے فاروق ستار کو گالیاں دی تھیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت (اے ٹی سی) میں میڈیا ہاؤسز پر حملے، اشتعال انگیز تقریر اور دیگر مقدمات سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس میں استغاثہ کے مزید تین گواہان کے بیانات قلمبند کیے گئے۔

گواہان میں انسپکٹر ہاشم بلو، انسپکٹر وقار تنولی اور شاہجہاں خٹک شامل تھے، گواہان کے بیانات پر جرح بھی مکمل کرلی گئی ہے اور سماعت 5 مارچ تک ملتوی کردی گئی۔

مقدمے میں 45 گواہان کے نام شامل کیے گئے ہیں اور اب تک 15 گواہان کے بیان قلمبند کیے جاچکے ہیں۔

بانی ایم کیو ایم نے فاروق ستار کو گالیاں دیں، گواہ کا بیان

کیس کی سماعت کے دوران گواہ انسپکٹر ہاشم بلو نے کہا کہ بانی ایم کیو ایم نے وقوعہ والے دن فاروق ستار کو گالیاں دی تھیں اور فاروق ستار کو پانچ لاکھ افراد جمع کرنے کا کہا تھا۔

گواہ نے کہا کہ فاروق ستارمطلوبہ تعداد میں لوگ جمع نہیں کر پائے تھے، مطلوبہ تعداد جمع نہ کرنے پربانی ایم کیو ایم نے فاروق ستار پر غصہ کا اظہار کیا۔

وکیل ملزمان لطیف پاشا نے کہا کہ چشم دید گواہ کے بیان سے ثابت ہوتا ہے کہ فاروق ستار بے گناہ ہے، تقریر پر سہولت کاری اور ہنگامہ ارائی ودیگر کی بنیاد پر درج کیا گیا۔

وکیل نے مزید کہا کہ بیان سے یہ ثابت ہوتا ہے بانی ایم کیو ایم فاروق ستار سے خوش نہیں تھے، یہ مقدمہ سیاسی بنیاد پر قائم کیا گیا ہے، عدالت نے گواہ کا بیان قلمبند کرنے کے بعد سماعت کو 5 مارچ تک ملتوی کردیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں