ملازم کا قتل، پنجاب اسمبلی سیکریٹریٹ نے توجہ دلاؤ نوٹس مسترد کردیا Punjab Assembly
The news is by your side.

Advertisement

گھریلو ملازم کا قتل، پنجاب اسمبلی سیکریٹریٹ نے توجہ دلاؤ نوٹس مسترد کردیا

لاہور: پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کی جانب سے گھریلو ملازم کے قتل میں ملوث مسلم لیگ ن کی رکن صوبائی اسمبلی شاہ جہاں بلے کی بیٹی کے خلاف پیش کیے جانے والے توجہ دلاؤ نوٹس کو اسمبلی سیکریٹریٹ نے مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں قائد حزب اختلاف نے گھریلو ملازم کے قتل میں ملوث مسلم لیگ ن کی رکن صوبائی اسمبلی شاہجان بلے کے خلاف توجہ دلاؤ نوٹس جمع کروایا تو اسمبلی سیکریٹریٹ نے اُسے مسترد کردیا۔

پنجاب اسمبلی سیکرٹیریٹ کے ذرائع کے مطابق گھریلو ملازم کے قتل میں ملوث حکومتی جماعت کی رکن شاہجان بلے کی بیٹی فوزیہ بی بی کے خلاف اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید کی جانب سے جمع کروائے جانے والے توجہ دلاﺅ نوٹس کو یہ کہہ کر مسترد کردیا گیا کہ توجہ دلاﺅ نوٹس صرف امن و امان کی صورتحال پر جمع کروایا جاسکتا ہے۔

پڑھیں: رکن اسمبلی کی بیٹی کے مبینہ تشدد سے ملازم ہلاک‘ بہن زخمی

دوسری جانب تحریک انصاف کی رکن شنیلا روتھ نے صوبائی دارالحکومت لاہور میں خانہ بدوش بستیوں میں گندگی کی وجہ سے پھیلنے والی بیماریوں کے خلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التواء جمع کروادی۔

اسمبلی میں جمع کروائی جانے والی تحریک التواء میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ شہر کے مختلف علاقوں میں خانہ بدوشوں کے ڈیرے ہیں جہاں پر نہ تو خاکروب آتے ہیں اور نہ ہی وہاں پر جمع ہونے والی گند کو اٹھانے کا کوئی بندوبست ہے۔

تحریک التواء میں مزید مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ شہر بھر کا کوڑا کرکٹ ان بستیوں میں پھینکا جانے لگا اور ان علاقوں میں بجلی، پانی سمیت ضروریاتِ زندگی کی بنیادی سہولیات موجود نہیں جس کی وجہ سے یہاں کے مکینوں میں ہیپاٹائٹس کی بیماری تیزی سے پھیل رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں