The news is by your side.

Advertisement

طالبہ سے جنسی زیادتی، اپیل مسترد، معروف کرکٹر کی 5 سال قید کی سزا برقرار

لندن: برطانوی عدالت نے یونیورسٹی طالبہ سے جنسی زیادتی کے مقدمے میں آسٹریلوی کرکٹر ایلکس کی 5 سالہ سزا کے خلاف اپیل مسترد کردی اور پانچ سال قید کی سزا کو برقرار رکھا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانوی عدالت نے آسٹریلوی کرکٹر ایلکس ہیپرن کو طالبہ سے جنسی زیادتی کا جرم ثابت ہونے پر گزشتہ سال اپریل میں پانچ سال قید کی سزا سنائی تھی، کرکٹر کی سزا کے خلاف اپیل پر سماعت ہوئی جس پر عدالت نے اپیل خارج کرتے ہوئے 5 سال سزا کا فیصلہ برقرار رکھا ہے۔

آسٹریلوی آل راؤنڈر نے دوستوں کے ساتھ لگائی تھی اور ہوٹل میں سوتی ہوئی یونیورسٹی کی 24 سالہ طالبہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

رپورٹ کے مطابق الیکس ہیپرن نے ویڈیو لنک کے ذریعے عدالتی کارروائی میں شرکت کی، عدالت نے ان کی اپیل خارج کردی جس کے بعد کرکٹر کو پانچ سال جیل میں رہنا پڑے گا۔

الیکس ہیپرن کو جنسی زیادتی کا جرم ثابت ہونے پر گزشتہ سال 30 اپریل کو پانچ سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

24 سالہ کرکٹر نے جمعرات کی صبح ساڑھے دس بجے انگلیںڈ اینڈ ویلز کی دوسری سینئر ترین عدالت میں سزا کے خلاف اپیل دائر کی تھی جسے خارج کردیا گیا ہے۔

لارڈ چیف جسٹس لارڈ برنیٹ اور دو دیگر سینئر ججز نے ہیپرن کے خلاف اپیل پر فیصلہ سنایا، ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ کرکٹر سزا کو کس بنیاد پر دوبارہ چیلنج کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں