The news is by your side.

Advertisement

عائشہ اور ریمبو نے ایف آئی اے کو چکر دینے کی منصوبہ بندی بھی کی، ایک اور ٹیپ سامنے آ گئی

لاہور: ٹک ٹاکر عائشہ اور ریمبو نے ایف آئی اے کو چکرا کر رکھ دیا، اب ایف آئی اے کو غلط بیان دینے کی منصوبہ بندی کی ٹیپ بھی سامنے آ گئی۔

تفصیلات کے مطابق گریٹر اقبال پارک واقعے سے جڑے کرداروں عائشہ اور ریمبو کی گفتگو کی ایک اور مبینہ ٹیپ سامنے آ گئی ہے۔

یہ ٹیپ ایف آئی اے کو موبائل اور رقم سے متعلق غلط بیان دینے کی منصوبہ بندی پر مبنی ہے، آڈیو ٹیپ میں عائشہ کہتی ہے کہ ایف آئی اے میں موبائل کا نہیں لکھا ہوا، اور پیسے بھی تھوڑے لکھے گئے ہیں۔

ریمبو کی آواز کہتی ہے میں انھیں یہ کہوں گا کہ موبائل ڈیڑھ لاکھ کا لیا ہے، اس پر ایپل آئی ڈی بنانا تھی۔ عائشہ نے کہا کہنا کہ میڈم یہ ڈیڑھ پونے دو لاکھ کا موبائل تھا، تم کہنا میڈم نے لیا ان کو پتا ہوگا، ان کا فون تھا وہ شوٹ کرتی تھی۔

گریٹراقبال پارک کیس : عائشہ اکرم اور ریمبو کی تہلکہ خیز آڈیو ٹیپ سامنے آگئی

دوسری طرف ٹک ٹاکر عائشہ اکرم نے دھمکیاں ملنے پر لاہور کے تھانہ شاہدرہ میں ایک اور درخواست جمع کرا دی ہے، درخواست میں عائشہ اکرم کا کہنا تھا کہ 8 افراد کی گرفتاری کے بعد لوکل اور انٹرنیشنل فون نمبرز سے انھیں دھمکی آمیز کالز آ رہی ہیں۔

عائشہ اکرم نے درخواست میں کہا کہ راولپنڈی سے تعلق رکھنے والے ٹک ٹاکر علی شاہ اور اس کے ساتھی عرصہ دراز سے بلیک میل کر رہے ہیں، قوی امکان ہے کہ وہی کالز پر دھمکیاں دے رہے ہیں، ملزمان کو جلد گرفتار کیا جائے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی ایک تہلکہ خیز آڈیو ٹیپ سامنے آئی تھی جس میں دونوں کے مابین جیل میں شناخت ہونے والے ملزمان سے رقم لینے کی گفتگو کی گئی ہے۔

ٹیلی فون کال میں ریمبو نے عائشہ سے سوال کیا مجرم 6 ہیں یا 7؟ عائشہ نے جواب دیا 6 ہیں، ریمبو نے پوچھا فی مجرم کتنے پیسے لیے جائیں، زیادہ تر غریب ہیں تو عائشہ نے کہا مشکل سے انھوں نے پانچ پانچ لاکھ دینے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں