The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم سے بابر اعوان کی ملاقات، ’فارن فنڈنگ نہیں ممنوعہ فنڈنگ کا الزام ہے‘

وزیر اعظم کا ورلڈ بینک کی جانب سے بجٹ سپورٹ بحال کرنے کا خیر مقدم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان سے آج بابر اعوان نے خصوصی ملاقات کی، جس میں ملکی تازہ سیاسی صورت حال سمیت آئینی اور قانونی امور پر مشاورت کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنما اور معرورف قانون دان بابر اعوان نے ملاقات میں وزیر اعظم عمران خان کو الیکشن کمیشن میں جاری کیس سے متعلق بریفنگ دی، بابر اعوان نے کہا کہ پی ٹی آئی پر فارن فنڈنگ کا نہیں بلکہ ممنوعہ فنڈنگ کا جھوٹا الزام ہے۔

بابر اعوان نے کہا کہ پی ٹی آئی کے سارے اکاؤنٹس آڈٹ شدہ ہیں، قانوناً وفاقی حکومت ممنوعہ فنڈنگ کا جائزہ لے سکتی ہے، واویلا کرنے والے بے نامی اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کا حساب دیں۔

دریں اثنا، ملاقات میں ملک کی معاشی صورت حال میں بہتری اور تازہ اعداد و شمار پر بھی بات چیت کی گئی، وزیر اعظم نے ورلڈ بینک کی جانب سے بجٹ سپورٹ بحال کرنے کا خیر مقدم کیا، ذرایع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم نے کہا ملک میں معاشی عدم استحکام کی کوششیں ناکام ہو رہی ہیں، عالمی اداروں کا پاکستان پر اعتماد بڑھ رہا ہے، احتساب کا عمل جاری رہا تو اداروں کا اعتماد مزید بحال ہوگا۔

تازہ ترین:  بجٹری سپورٹ کی منظوری ، عالمی بینک پاکستان کو 50 کروڑ ڈالر دے گا

وزیر اعظم نے کہا کہ رول آف لا پر سمجھوتا ہوگا نہ کرپٹ مافیا کو رعایت ملے گی۔

بابر اعوان کا کہنا تھا کہ عالمی اداروں کا پاکستان پر بڑھتا اعتماد خوش آیند ہے، حکومت کی معاشی کامیابیوں کے ثمرات عوام تک جلد پہنچیں گے۔

واضح رہے کہ آج عالمی بینک نے پاکستان کے لیے بجٹری سپورٹ دوبارہ شروع کرنے کی منظوری دی، آیندہ سال مارچ تک پاکستان کو 50 کروڑ ڈالر دیے جانے کا امکان ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں