The news is by your side.

Advertisement

تاریخی بابری مسجد کی شہادت کو 27 برس بیت گئے

ایودھیا: مغل بادشاہ ظہیر الدین بابر کے نام سے منسوب تاریخی بابری مسجد کی شہادت کو ستائیس برس بیت گئے۔ ایودھیا اور فیض آباد میں اس موقع پر سیکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔ تفصیلات کے مطابق بابری مسجد کی شہادت کو 27 سال مکمل ہونے پر آج ایودھیا اور فیض آباد سمیت دیگر علاقوں میں‌ سیکیورٹی سخت کر دی گئی ہے اور کسی بھی متوقع خراب صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے پولیس کا گشت بڑھا دیا گیا ہے.

بھارتی ریاست اتر پردیش میں مغل بادشاہ ظہیر الدین محمد بابر کے نام سے منسوب بابری مسجد کی شہادت کے بعد اس قطعۂ زمین کی ملکیت کے حوالے سے مقدمہ درج کرایا گیا تھا۔

ہندو تنظیموں کا دعویٰ ہے کہ اس جگہ پر مندر کو گرا کر مسجد تعمیر کی گئی جب کہ اس کیس کے حوالے سے تحقیقاتی کمیشن کی رپورٹوں میں کہا گیا کہ مسجد کا انہدام ایک منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا تھا۔ تاہم تمام ٹھوس حقائق اور کمیشن کی رپورٹوں کو نظرانداز کرتے ہوئے بھارتی سپریم کورٹ نے نومبر میں بابری مسجد کی متنازع زمین کا فیصلہ ہندوؤں کے حق میں دے دیا جس کے مطابق بابری مسجد کی متنازع جگہ پر مندر تعمیر کیا جائے گا جب کہ مسلمانوں کو ایودھیا میں متبادل جگہ دینے کا حکم دیا گیا ہے۔

واضح‌ رہے کہ ہندو انتہا پسندوں 6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کو شہید کردیا تھا جس کے بعد فسادات میں مسلمانوں کے گھر جلائے گئے اور ہزاروں مسلمان جان سے گئے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں