The news is by your side.

Advertisement

سعودی سفارت کار کا قاتل اپنے انجام کو پہنچا

ڈھاکا: بنگلادیش میں سعودی سفارت کار ’خلف العلی‘ کے قاتل کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق بنگلادیش میں سعودی سفارت کار خلف العلی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا تھا، حملہ آور سیف کو آج پھانسی دے دی گئی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ 2012 میں پیش آیا تھا، 45 سالہ خلف العلی کو ڈھاکا کے سفارتی علاقے میں گولیاں مار کر موت کے گھاٹ اتار دیا گیا تھا۔

عدالتی حکم کی روشنی میں مجرم کو ڈھاکا جیل میں پھانسی دی گئی، پھانسی کے احکامات 2013 میں جاری کردیے گئے تھے تاہم عمل درآمد گذشتہ روز ہوا۔

پولیس کے مطابق مجرم ایک راہزن گروہ کا سربراہ تھا اور اس نے سفارت کار کو لوٹنے کے دوران نشانہ بنایا، خلف العلی گولی لگنے کے بعد زندہ تھے لیکن اسپتال پہنچتے ہی دم توڑ گئے۔

خیال رہے کہ عالمی تنظیموں اور انسانی حقوق کے رہنماؤں کی جانب شدید تنقید کے باوجود بنگلادیش میں قتل اور دیگر سنگین جرائم میں ملوث مجرموں کو پھانسی دی جارہی ہے۔

گذشتہ سال پانچ بڑے مذہبی رہنماؤں کو دہشت گردی کے جرم میں بنگلادیشی عدالت نے پھانسی دی تھی، اُسی سال ہی درجنوں دہشت گردوں کو بھی تختہ دار پر لٹکایا گیا۔

بنگلہ دیش: جماعت اسلامی کے ایک اور رہنما میر قاسم علی کو پھانسی دیدی گئی

خیال رہے کہ ستمبر 2016 میں بنگلادیشی حکومت نے پاکستان سے وفاداری کے جرم میں جماعت اسلام کے رہنما میر قاسم کو پھانسی دی تھی، بعد ازاں حکومت پاکستان نے پھانسی پر اظہار مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ حزب اختلاف کو ناقص ٹرائل کے ذریعے دبانا غیر جمہوری عمل ہے، بنگلادیش 74ء کے سہ فریقی معاہدے کی پاسداری کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں